اوورسیز پاکستانیوں کی فلاح و بہبود کے حوالے سے رکاوٹیں کھڑی کرنے والے  شرپسند عناصر کے خلاف آئینی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا، وائس چیئرپرسن او پی سی چوہدری وسیم اختر

 ڈسٹرکٹ اوورسیز پاکستانیز کمیٹی ملتان کے آفس واقع کارپوریشن بلڈنگ ممتاز آباد میں 50 سے 60غنڈہ گرد عناصر  نے دھاوا بول کر آفس میں توڑ پھوڑ کی، وائس چیئرپرسن او پی سی چوہدری وسیم اختر

 اوورسیز پاکستانیوں کی فلاح و بہبود کے حوالے سے رکاوٹیں کھڑی کرنے والے  شرپسند عناصر کے خلاف آئینی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا، وائس چیئرپرسن او پی سی چوہدری وسیم اختر

لاہور: وائس چیئرپرسن اوورسیز پاکستانیز کمیشن(او پی سی) پنجاب چوہدری وسیم اختر نے کہا ہے کہ اوورسیز پاکستانیوں کی فلاح و بہبود کے حوالے سے رکاوٹیں کھڑی کرنے والے شرپسند عناصر کے خلاف آئینی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا۔ ڈسٹرکٹ اوورسیز پاکستانیز کمیٹی ملتان کے ایگزیکٹو ممبر محمد شیراز پر سرکاری دفتر میں تشدد اور ہنگامہ آرائی کرنے اور اہم سرکاری ریکارڈ ضائع کرنے کی کوشش کرنے والے غنڈہ عناصر کے خلاف مقدمہ درج کر کے جلد کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اوورسیز پاکستانی دنیا بھر میں وطن عزیز کے قابل احترام سفیر گردانے جاتے ہیں اور ان کی صحیح معنوں میں خدمت اور درپیش مسائل کے ازالہ کیلئے پنجاب او پی سی دن رات مصروف عمل ہے۔

واضح رہے گذشتہ روز ڈسٹرکٹ اوورسیز پاکستانیز کمیٹی ضلع ملتان کے آفس واقع کارپوریشن بلڈنگ ممتاز آباد میں 50 سے 60غنڈہ گرد عناصر نے دھاوا بول کر آفس میں توڑ پھوڑ کی اور ممبر ایگزیکٹو کمیٹی کو زدو کوب کرنے کے ساتھ ساتھ سنگین نتائج کی دھمکیاں بھی دیں۔ تھانہ ممتاز آباد ملتان میں اس افسوسناک واقعہ کی ایف آئی آر بھی درج کی جا چکی ہے۔ وائس چیئرپرسن او پی سی چوہدری وسیم اختر نے اس کھلی غنڈہ گردی کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان احمد بزدار، انسپکٹر جنرل آف پولیس پنجاب اور دیگر ارباب بست و کشاد سے غنڈہ گرد عناصر کے خلاف سخت قانونی کاروائی کیے جانے کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے واضح کیا کہ اوورسیز پاکستانیوں کے جملہ مسائل کے حل کیلئے میرے آفس کے دروازے ہمہ وقت کھلے ہیں۔