ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج راجن پور محمد خلیل ناز نے آج ڈسٹرکٹ جیل راجن پور کا دورہ

سپرنٹنڈنٹ ڈسٹرکٹ جیل راجن پور عبدالصبور سکھیرا بھی اس موقع پر موجود تھے۔ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نےجیل کے کچن میں اسیران کو دیا جانے والا کھانا چیک کیا اور کھانے کے معیار کی تعریف کی۔انھوں نےہسپتال کا وزٹ کیا اور قیدی مریضوں کی خیریت دریافت کی

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج راجن پور محمد خلیل ناز نے آج ڈسٹرکٹ جیل راجن پور کا دورہ

لاہور : ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج راجن پور محمد خلیل ناز نے آج ڈسٹرکٹ جیل راجن پور کا دورہ کیا۔سپرنٹنڈنٹ ڈسٹرکٹ جیل راجن پور عبدالصبور سکھیرا بھی اس موقع پر موجود تھے۔ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نےجیل کے کچن میں اسیران کو دیا جانے والا کھانا چیک کیا اور کھانے کے معیار کی تعریف کی۔انھوں نےہسپتال کا وزٹ کیا اور قیدی مریضوں کی خیریت دریافت کی۔ محمد خلیل ناز نےجیل انتظامیہ کی جانب سے مقید اسیران کو فراہم کی جانے والی سہولیات پر اطمینان کا اظہار کیا۔اسیران کے مسائل سنے اس موقع پر کسی قیدی کی جانب سے کوئی شکایت درج نہ کرائی گئی۔ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نےمعمولی نوعیت کے مقدمات میں گرفتار 05اسیران کو رہا کرنے کا حکم صادر فرمایا۔

قبل ازیں آئی جی جیل خانہ جات پنجاب مرزا شاہد سلیم بیگ کی ہدایات پر ڈسٹرکٹ جیل راجن پور پر آزمائشی مشقوں(Mock Excercise)کا انعقاد کیا گیا۔سپرنٹنڈنٹ جیل راجن پور عبدالصبور سکھیرا بھی اس موقع پر موجود تھے۔مشقوں میں لاء انفورسمنٹ سے منسلک تمام اداروں نے شرکت کی۔ایمرجنسی پلان بنایا گیا تاکہ جیل میں دہشت گردوں کے حملے کی فرضی صورتحال پیدا کی جاسکے۔صبح کے وقت وارڈ نے کنٹرول روم سے واکی ٹاکی کے ذریعے دہشت گردوں کے اچانک حملے سے آگاہ کیا۔سائرن بجانے کے بعد ایمرجنسی کا اعلان کیا گیا۔

تمام جیل کو مکمل لاک آپ کر دینے کے بعد تمام وارڈر اور افسران کی جانب سے مستعد ردعمل کا مظاہرہ کیا گیا۔پولیس وائرلیس کنٹرول اور ڈسٹرکٹ کنٹرول کو واقعہ کی اطلاع کی گئی۔ایلیٹ فورس کے تربیت یافتہ وارڈرز نے جیل کی عمارت کو چاروں اطراف سے گھیر لیا تاکہ دہشت گردوں کے حملے کو روکا جا سکے۔ایمرجنسی صورتحال سے کامیابی کے ساتھ نبٹا گیا اور دہشت گردوں کو منتشر کیا گیا۔کلیئرنس الارم بجنے کے بعد موک ایکسائز اختتام پذیر ہو گئیں۔