بیرون ملک پاکستانی ملک کا بیش قیمت اثاثہ ہیں، بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی جانب سے بھیجی جانے والی ترسیلات زر کا ملکی معیشت کے استحکام میں کلیدی کردار ہے، وزیرِ اعظم عمران خان

بیرون ملک پاکستانی ملک کا بیش قیمت اثاثہ ہیں، بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی جانب سے بھیجی جانے والی ترسیلات زر کا ملکی معیشت کے استحکام میں کلیدی کردار ہے، وزیرِ اعظم عمران خان

اسلام آباد :وزیرِ اعظم عمران خان نے کہاہے کہ بیرون ملک پاکستانی ملک کا بیش قیمت اثاثہ ہیں، بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی جانب سے بھیجی جانے والی ترسیلات زر کا ملکی معیشت کے استحکام میں کلیدی کردار ہے،وطن کی تعمیر و ترقی میں حصہ ڈالنے والے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں اور ان کے خاندانوں کو سہولیات اور مراعات فراہمی کے لئے حکومت پرعزم ہے۔

وزیراعظم آفس کے میڈیا ونگ سےجاری بیان کے مطابق ان خیالات کا اظہار وزیر اعظم عمران خان نےجمعہ کو ملکی ترسیلات زر میں اضافے کے حوالے سے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔

اجلاس میں وزیر خزانہ، وزیر برائے اقتصادی امور، مشیر تجارت، معاونین خصوصی برائے نیشنل سیکورٹی، ریونیو (محصولات) و دیگر سینئر حکام شریک ہوئے ۔ ترسیلات زر میں اضافے اور ملکی معیشت کو مزید مستحکم کرنے کے حوالے سے بیرون ملک پاکستانیو ں کی جانب سے بھیجی جانے والی رقوم پر حکومت کی جانب سے دی جانے والی مراعات، روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹ کی کامیابی، ملکی برآمدات میں اضافے خصوصاً آئی ٹی سے متعلقہ برآمدات میں اضافہ، غیر ملکی سرمایہ کاری کے فروغ ا ور مختلف ترقیاتی منصوبوں کے حوالے سے مختلف ممالک و اداروں سے دو طرفہ معاہدوں کو منطقی انجام تک پہنچانے کے حوالے سے متعلقہ معاملات پر تفصیلی غور کیاگیا۔

سٹیٹ بنک کی جانب سے اجلاس کو بتایا گیا کہ ترسیلات زر کی مد میں حکومت کی جانب بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو پرکشش مراعات دینے کی حکومتی پالیسی کے خاطر خواہ ثمرات برآمد ہو رہے ہیں۔

اجلاس کو بتایا گیا کہ روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹ کی مد میں صرف دس ماہ کے قلیل عرصے میں اب تک 1.561ارب ڈالر موصول ہو چکے ہیں اور ان میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ مالی سال 2018سے اب تک کورونا وباء کے باوجود ترسیلات زر میں مسلسل اضافہ سامنے آیا ہے جوکہ بیرون ملک پاکستانیوں کا موجودہ حکومت کی پالیسیوں اور وزیرِ اعظم عمران خان کی صلاحیتیوں پر مکمل اعتماد کا مظہر ہے۔

اجلاس کو بتایا گیا کہ بیرون ملک پاکستانیوں کی سہولت کے لئے “نیشنل ریمٹنس لائلٹی پروگرام”کا اجراء بھی جلد کر دیا جائے گا۔اس پروگرام کے ذریعے ایک موبائل ایپلیکیشن متعارف کرائی جائے گی اور ترسیلات زر بھجوانے والے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو مزید مالی مراعات فراہم کی جائیں گی۔

اس پروگرام کا اجراء پی آئی اے، ایف بی آر، نادرا، سٹیٹ لائف، او پی ایف، بنیوولینٹ اینڈ اولڈ ایج ایمپلائیز فنڈ و دیگر سرکاری اداروں کے اشتراک سے کیا جائے گا۔ اس پروگرام سے وابستہ بیرون ملک پاکستانیوں کو مذکورہ اداروں سے مراعات میسر آئیں گی۔

اجلاس کو روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹ، روشن اپنی گاڑی سکیم اور روشن سماجی خدمت کی کامیابیوں کے حوالے سے بریفنگ اجلاس کو بتایا گیا کہ اس ضمن میں “روشن اپنا گھر”سکیم کا اجراء بھی جلد کر دیا جائے گا۔

مشیر تجارت نے مختلف شعبوں میں برآمدات میں ممکنہ اضافے خصوصاً آئی ٹی کے شعبے میں ملکی استعداد کو برؤے کار لانے کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی۔ سرمایہ کاری بورڈ کی جانب سے بتایا گیا کہ غیر ملکی سرمایہ کاروں کی سہولت کے لئے حکومتی سطح پر ہر ممکنہ کوشش کی جا رہی ہے اور کاروبار کرنے میں مزید آسانیاں پیدا کرنے کے حوالے سے کوششیں جاری ہیں۔

وزیر اعظم عمران خان نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بیرون ملک پاکستانی ملک کا بیش قیمت اثاثہ ہیں۔ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی جانب سے بھیجی جانے والی ترسیلات زر کا ملکی معیشت کے استحکام میں کلیدی کردار ہے۔ وطن کی تعمیر و ترقی میں حصہ ڈالنے والے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں اور ان کے خاندانوں کو سہولیات اور مراعات فراہمی کے لئے حکومت پرعزم ہے۔

وزیراعظم نے ہدایت کی کہ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو ترسیلات زر کے ضمن میں مزید مراعات فراہم کرنے پر غور کیا جائے، معاشی ترقی اور بڑھتے ہوئے شرح نمو کو مد نظر رکھتے ہوئے زرمبادلہ و دیگر معاشی ضروریات کو مد نظر رکھتے ہوئے مفصل و منظم منصوبہ بندی کی جائے۔ وزیرِ اعظم کی متعلقہ وزارتوں کو ہدایت کی کہ ترسیلات زر کے ضمن میں مختلف شعبوں میں مستقبل کے اہداف مرتب کرکے ان کے حصول کے حوالے سے حکمت عملی تشکیل دی جائے