چئیرمین سینیٹ محمدصادق سنجرانی سے پاکستان میں کیوبا کے سفیر زینر جیویر جیرو گونزیلز کی ملاقات

چئیرمین سینیٹ محمدصادق سنجرانی سے پاکستان میں کیوبا کے سفیر زینر جیویر جیرو گونزیلز کی ملاقات

اسلام آباد :چئیرمین سینیٹ محمدصادق سنجرانی سے پاکستان میں کیوبا کے سفیر زینر جیویر جیرو گونزیلز نے جمعہ کو پارلیمنٹ ہاوُس میں ملاقات کی ہے۔

سینیٹ سیکرٹریٹ سے جاری بیان کے مطابق ملاقات میں دوطرفہ تعلقات، علاقائی صورتحال اور باہمی دلچسپی کے امور پرتبادلہ خیال کیا گیا۔ چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی نے کہا کہ پاکستان کیوبا کے ساتھ تعلقات کو انتہائی قدر کی نگاہ سے دیکھتاہے،

دونوں ممالک کے درمیان دہائیوں پرانے گہرےتعلقات کو معاشی اور پارلیمانی تعاون کے ذریعے نئی بلندیوں تک لے جانے کی ضرورت ہے۔ چئیرمین سینیٹ محمد صادق سنجرانی نے صحت اور تعلیم کے شعبوں میں کیوبا کے تعاون کو سراہا۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے مابین باہمی تعاون کو مزید فروغ دینے کیلئےدیگر مواقع تلاش کرنے کی ضرورت ہے۔

چئیرمین سینیٹ نے پاکستانی میڈیکل طلباءکے لئے کیوبا کے اسکالرشپ پروگرام کو سراہا۔ انہوں نے پاکستان میں قدرتی آفات خصوصاً 2005 کے زلزلے سے ہونے والی تباہی کے بعد کیوبا کی طبی امداد کی بھی تعریف کی۔ اس موقع پر کیوبا کے سفیر زینر جیویر کیرو گونزیلز نے کہا کہ کیوبا بھی پاکستان کے ساتھ اپنے تعلقات کو انتہائی اہمیت دیتا ہے۔

فریقین نے عوام سے عوام کے رابطے اور معاشی تعاون کو مزید مستحکم کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔ چیئرمین سینیٹ نے کہا کہ دونوں ممالک کو پارلیمان کے ذریعے دو طرفہ تعلقات کو مزید مضبوط بنانے کی ضرورت ہے، کیوبا پاکستان میں معاشی اور انسانی وسائل کی صلاحیت سے فائدہ اٹھانے کا خواہاں ہے۔

کیوبن سفیر نے کہا کہ پارلیمانی روابط کو مزید مستحکم کرنے کیلئے کیوبا کی قومی اسمبلی میں فرینڈشپ گروپ بھی قائم کیا گیا ہے۔ چیئرمین سینیٹ نے کہا کہ پاکستان میں سرمایہ کاری کیلئے ماحول انتہائی سازگار ہے، سرمایہ کاردوست پالیسیوں سے کیوبا کو بھی فائدہ اٹھانا چاہئے، کیوبا کیلئے توانائی، تجارت، زراعت اور فشری شعبوں میں سرمایہ کاری کے مواقع موجود ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان تجارت، صحت اور ثقافت کے شعبوں میں کیوبا کے ساتھ تعلقات کو مزید فروغ دینے کا خواہاں ہے۔

کیوبن سفیر نے کہا کہ کیوبا کے بزنس مین پاکستان میں سرمایہ کاری کے خواہش مند ہیں۔ صادق سنجرانی نے کہا پاکستان خطے میں امن اور استحکام کو فروغ دینے کیلئے پرعزم ہے۔ چیئرمین سینیٹ نے کیوبا کی طرف سے پاکستان کیلئے سفیر بننے پر مبارکباد پیش کی۔

چیئرمین سینیٹ نے اس امید کا اظہار کیا کہ کیوبا کے سفیر کی پاکستان میں موجودگی سے دونوں ممالک کے تعلقات مزید مستحکم ہو گی۔ چیئرمین سینیٹ نے کیوبا میں کورونا وباء سے ہونی والی ہلاکتوں پر افسوس کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ کیوبا نے کورونا وباء کی روک تھام کیلئے موثر اقدامات اٹھائے اور امید ہے کہ بہت جلد کیوبا کی حکومت اس وبا پر قابو پا لے گا۔

انہوں نے کہا کہ 27 فروری 2017 کو چیئرمین سینیٹ کے دورہ کیوبا کے دوران پارلیمانی امور کو مستحکم کرنے کیلئے مفاہمتی یاداشت پر دستخط کئے گئے۔ انہوں نے کہا کہ مفاہمتی یاداشت، سینیٹ آف پاکستان اور پیپلز پاور ریپبلک آف کیوبا کے مابین تعلقات کو مزید فروغ دینے میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کو حقیقی معنوں میں مفاہمتی یاداشت پر عمل درآمد کو یقینی بنانے کی ضرورت ہے، وبا کی صورتحال بہتر ہونے کے بعد کیوبا کی پارلیمنٹیرینز کے دورہ پاکستان کے منتظر ہیں۔

چئیرمین سینیٹ نے کہا کہ ایک ملین ڈالر کی موجودہ تجارتی حجم دونوں ممالک کے مابین تجارت کی حقیقی صلاحیت کے مطابق نہیں ہے، کیوبا سے تربیت یافتہ پاکستانی ڈاکٹرز ملک میں صحت کے شعبوں میں خدمات سرانجام دے رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بھارت کے 5 اگست کے بعد کے اقدامات اور مقبوضہ جموں و کشمیر کا جغرافیہ تبدیل کرنے کی کوشش اقوام متحدہ کی قراردادوں اور بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی ہے، بھارت کو فوری طور پر مقبوضہ کشمیر میں کرفیو، معصوم کشمیریوں پر لگائی گئی پابندیوں کو ختم کرنا چاہئے، بھارت فوری طور پر قیدیوں کو رہا کرے اور اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق مقبوضہ کشمیر کے تنازعے کو حل کرے