کوروناوائرس کی وبا کا خطرہ اب بھی برقرار ہے، عالمی ادارہ صحت

کوروناوائرس کی وبا کا خطرہ اب بھی برقرار ہے، عالمی ادارہ صحت

برسلز :عالمی ادارہ صحت کے یورپی دفتر کے ڈائریکٹر ڈاکٹر ہینری ہانس نے کہا کہ یورپی خطے کے 53 ممالک میں نوول کورونا وائرس کے کیسوں میں مسلسل 10ہفتوں میں سے مسلسل کمی آنے کے بعد

گزشتہ ہفتے سفراور تقریبات سمیت سماجی اجتماعات پر عائد پابندیوں میں نرمی کی وجہ سےکورونا کیسزمیں 10 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

انہوں نے خبردار کیا کہ اگست تک یورپ میں متغیر وائرس ڈیلٹا کے بڑھنے کا خطرہ ہے۔ان کے مطابق یورپ میں اب بھی 63 فیصد افراد ویکسین کی پہلی خوارک کے منتظر ہیں۔ اگر ویکسین کو وائرس کے خلاف ایک مؤثر ہتھیار مان بھی لیا جائے تو ہر شخص کو ویکسین کی دونوں خوراکیں ملنے تک سخت احتیاطی تدابیر پر عمل پیرا رہنے کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ ویکسین میں تاخیر ،زندگی اور معاشی نقصان کا باعث بن سکتی ہے۔ تاہم خطے میں ویکسین کی شرح بہت سست ہے۔ یورپ میں ویکسی نیشن کی اوسط شرح 24 فیصد ہے۔پالیسی سازوں کو یہ ذہن میں رکھنا چاہیے کہ کوروناوبا ابھی ختم نہیں ہوئی، اس کا خطرہ برقرار ہے