میاں اسلم اقبال سے آل پاکستان ٹیوٹ سیکٹر فورم کے نمائندہ وفد کی ملاقات، ٹیوٹ سیکٹر کھولنے کا مطالبہ،ایس اوپیز پر مکمل عملدرآمدکی یقین دہانی

ڈوبتی معیشت کی بحالی اور نوجوانوں کو روزگار کی فراہمی وزیر اعظم کا ویژن ہے۔میاں اسلم اقبال

میاں اسلم اقبال سے آل پاکستان ٹیوٹ سیکٹر فورم کے نمائندہ وفد کی ملاقات، ٹیوٹ سیکٹر کھولنے کا مطالبہ،ایس اوپیز پر مکمل عملدرآمدکی یقین دہانی

لاہور : صوبائی وزیر صنعت و تجارت میاں اسلم اقبال سے آل پاکستان ٹیوٹ سیکٹر فورم کے نمائندہ وفد نے پنجاب سرمایہ کاری بورڈ کے دفتر میں ملاقات کی۔ جس میں وفد نے ٹیوٹ سیکٹر کھولنے کا مطالبہ کیا۔ وفد کا کہنا تھا کہ ٹیوٹ سیکٹر صنعتوں کوتربیت یافتہ افرادی قوت فراہم کرتا ہے لہذا معیشت کے اس اہم سیکٹر کو کھولاجائے۔ وفد نے حکومت کی جانب سے جاری شدہ ایس او پیز پر عملدرآمد کی یقین دہانی کرواتے ہوئے کہا فنی تعلیم کے اداروں میں ایک کلاس میں 15سے20 طلبہ ہوتے ہیں، ایس اوپیز پر آسانی سے عملدرآمد ہو سکتا ہے۔

صوبائی وزیر صنعت و تجارت میاں اسلم اقبال نے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ھے کہ کرونا وائرس کی عالمی وبا سے قومی معیشت بری طرح متاثر ہوئی ہے۔ ڈوبتی معیشت کی بحالی اور نوجوانوں کو روزگار کی فراہمی وزیر اعظم عمران خان کاویژن ہے۔ انہوں نے کہا کہ فنی تعلیم کے فروغ سے ہی غربت اور بے روزگاری جیسے مسائل پر قابو پایا جا سکتا ہے۔ مارکیٹ کی ضروریات کے مطابق ہنر مند افرادی قوت کی تیاری وقت کی ضرورت ہے۔ قومی معیشت کی بحالی کے اہم شعبوں کو مرحلہ وار کھولا گیا ہے۔ٹیوٹ سیکٹر نوجوانوں کو روزگار کی فراہمی کے حوالے سے بے حد اہمیت رکھتا ہے۔یہ سیکٹر لاک ڈاؤن کے بعد کھلنے والی انڈسٹری کو ہنر مند افرادی قوت فراہم کرنے کا بڑا ذریعہ ہے۔اس سیکٹر کو کھولنے کا معاملہ این سی او سی کے اجلاس میں رکھوں گا۔ قوی امید ہے کہ اچھی خبر ملے گی،۔ملاقات کرنے والوں میں عبدالخالق چیف ایگزیکٹو مینسول ٹریننگ انسٹیٹیوٹ، احمد شفیق سی ای او لیڈنگ انٹرنیشنل ہوٹل اور دیگر شامل تھے۔