کورونا وائرس، فرانس کے سابق صدر چل بسے

 فرانس کو برسوں کے قدامت پسند گولسٹ حکومت کے بعد معیشت کو آزاد کرنے اور معاشرتی رویوں کو آزاد کرنے کی کوشش کرنے والے یورپی اتحاد کے اہم معمار  ویلری گیسکارڈ ایس اسٹنگ بدھ کے روز 94  برس کی عمر میں انتقال کر گئے

کورونا وائرس، فرانس کے سابق صدر چل بسے

کورونا وائرس کا شکار فرانس کے سابق صدر ویلری گیسکارڈ ایس اسٹنگ چل بسے، سابق صدر امراضِ قلب کی دیگر بیماریوں میں بھی مبتلا تھے۔   فرانس کو برسوں کے قدامت پسند گولسٹ حکومت کے بعد معیشت کو آزاد کرنے اور معاشرتی رویوں کو آزاد کرنے کی کوشش کرنے والے یورپی اتحاد کے اہم معمار  ویلری گیسکارڈ ایس اسٹنگ بدھ کے روز 94  برس کی عمر میں انتقال کر گئے۔ ویلری گیسکارڈ ایس اسٹنگ 2 فروری 1926 کو جرمنی کے کوبلنز میں پیدا ہوئے تھے ، جہاں ان کے والد ایڈمونڈ پہلی جنگ عظیم کے بعد رائن لینڈ پر فرانسیسی قبضے کے لیے وزارت خزانہ کے عہدیدار کے طور پر خدمات انجام دے رہے تھے۔ 

1974 سے 1981 تک فرانس کے صدر رہنے والے گسکارڈ نے فرانسیسی معاشرے کو جدید بنانے کی صدارت کی جس میں باہمی رضامندی سے طلاق کی اجازت دی گئی، اسقاط حمل کو قانونی حیثیت دی گئی اور ووٹنگ کی عمر 21 سال سے کم کرکے 18 سال کردی گئی۔