محکمہ لائیوسٹاک میں پنجاب لائیوسٹاک پالیسی بارے اہم اجلاس

ٹیکنالوجی ٹرانسفر اور انفراسٹکچر کو بہتر بنا نا اولین ترجیح ہے:سیکرٹری لائیوسٹاک کیپٹن (ر)ثاقب ظفر

محکمہ لائیوسٹاک میں پنجاب لائیوسٹاک پالیسی بارے اہم اجلاس

لاہور : ٹیکنالوجی ٹرانسفر اور استعداد کار بڑھانے کے لیے مختلف تجاویز پر کام کر رہے ہیں تاکہ موجودہ انفراسٹرکچر کو استعمال میں لا کر مویشی پال حضرات کو بہترین اور بروقت سروسز مہیا کی جا سکیں۔ ان خیالات کا اظہار سیکرٹری لائیوسٹاک کیپٹن (ر)ثاقب ظفر نے محکمہ لائیوسٹاک میں ہونے والے ایک اہم اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ تفصیلات کے مطابق محکمہ لائیوسٹاک میں لائیوسٹاک پالیسی کی تکمیل اور ریسورس موبلائزیشن پر اہم اجلاس منعقد ہوئے۔

لائیوسٹاک پالیسی کے حوالے سے ہونے والے اجلاس کے دوران سیکرٹری لائیوسٹاک کیپٹن (ر)ثاقب ظفر کا کہنا تھا کہ پنجاب کی پہلی لائیوسٹاک پالیسی جلد پنجاب کابینہ سے منظور کروا کر نافذ کر دی جائے گی۔ مزید یہ کہ مختلف شعبہ جات میں قلیل،وسط اور طویل مدتی اہداف کے حصول کے لیے تمام تر وسائل بروئے کار لائے جائیں گے۔ اُن کا کہنا تھا کہ لائیوسٹاک پالیسی کی تشکیل کے لیے لائیوسٹاک ٹیم اور یو ایس ایڈ (PEEP)نے بھرپور محنت کی ہے۔ مسٹر اینڈریو یو ایس ایڈ(PEEP)نے پالیسی کی تشکیل کے حوالے سے محکمانہ افسران کی کارکردگی کو سراہا۔

ریسورس موبلائزیشن کے حوالے سے ہونے والے اجلاس کے دوران سیکرٹری لائیوسٹاک کیپٹن (ر)ثاقب ظفر کا کہنا تھا کہ ایسی تجاویز لائیں جائیں جن سے ہسپتالوں اور دیگر محکمانہ دفاتر کو اپ گریڈ کیا جا سکے تاکہ سروس ڈیلیوری بہتر بنانے کے ساتھ ساتھ دودھ اور گوشت کی مجموعی پیداوارمیں اضافہ ہو سکے۔مزید برآں ویٹرنری ہسپتالوں اور مویشی پال حضرات میں جدید ٹیکنالوجی کو متعارف کروانے کے لیے مزید اقدامات کئے جائیں۔ اجلاس کے دوران ایڈیشنل سیکرٹریز سمیت ڈائریکٹر جنرلز اور دیگر محکمانہ افسران کی بھی شرکت۔