اورنج لائن میٹرو ٹرین کے آپریشنز کے 100 روز کامیابی سے مکمل 

اس عرصے کے دوران ٹرین میں کرونا سے متعلقہ تمام ضروری ایس او پیز پر سختی سے عمل درآمد کو یقینی بنایا گیا۔  ان سبک رفتار جدید ٹیکنالوجی سے چلنے والی ٹرینوں کی آپریشنل ٹائمنگز صبح 6:15تا رات 10 بجے ہے

اورنج لائن میٹرو ٹرین کے آپریشنز کے 100 روز کامیابی سے مکمل 

لاہور: اورنج لائن میٹرو ٹرین سسٹم (او ایل ایم آر ٹی ایس) نے آج ، بتاریخ 2 فروری 2021، بروز منگل کو اپنے آپریشنز کے ابتدائی 100 روز کامیابی سے مکمل کرلئے ہیں۔ اس عرصے کے دوران ٹرین میں کرونا سے متعلقہ تمام ضروری ایس او پیز پر سختی سے عمل درآمد کو یقینی بنایا گیا۔  ان سبک رفتار جدید ٹیکنالوجی سے چلنے والی ٹرینوں کی آپریشنل ٹائمنگز صبح 6:15تا رات 10 بجے ہے۔ ہر ٹرین کے درمیان 5 منٹ تک کا وقفہ ہے جس کا انحصار پیک آوورز پر ہوتا ہے جس کی وجہ سے یہ روزمرہ مسافروں کے لئے قابل بھروسہ، باسہولت اور کم لاگت کی حامل ٹرانسپورٹ ہے۔ 26اسٹیشنوں پر محیط ڈیرہ گجراں سے علی ٹاو¿ن تک کا سفر ٹرین کی بدولت ڈھائی گھنٹے سے سمٹ کر محض 45 منٹ کا رہ گیا ہے۔ 

25 اکتوبر 2020 کو پاکستان اورنج لائن ٹرین کے آغاز کے ساتھ نئے دور کے جدید مواصلاتی نظام ریل ٹرانزٹ میں داخل ہوگیا ہے ۔ اورنج لائن ٹرین ، چائنا پاکستان اکنامک کوریڈور (سی پیک) اور بیلٹ اینڈ روڈ اقدام کے تحت پاکستان کا پہلا بڑا ٹرانسپورٹ کا منصوبہ ہے ۔ اورنج لائن میٹرو ٹرین پروجیکٹ ، چائنا ریلوے گروپ کمپنی لمیٹڈ اور چائنا آرڈیننس گروپ کوآپریشن کے چائنا نارتھ انڈسٹریز کی جانب سے مشترکہ طور پر تعمیر کیا گیا ہے جبکہ اسکے آپریشنز اور دیکھ بھال کا کام قائدانہ انداز سے نورنکو انٹرنیشنل کے ساتھ ساتھ گوانگزہو میٹرو گروپ (جی ایم جی) اور ڈائیو پاکستان ایکسپریس کی جانب سے کیا جاتا ہےاورنج لائن میٹرو ٹرین پروجیکٹ میں شامل دھوئیں اور کاربن کے اخراج سے پاک ٹرینیں نہ صرف لاہور کے شہریوں کو اعلیٰ معیار کی ٹرانسپورٹ خدمات فراہم کررہی ہیں بلکہ ملک میں جدت اور شہری ترقی کی نئی رفتار کے آغاز کے ساتھ ساتھ ماحول دوستی کو بھی مدنظر رکھا جارہا ہے ۔