وزیر خارجہ سے وفاق المدارس العربیہ کے سیکرٹری جنرل و معروف عالم دین قاری حنیف جالندھری کی ملاقات

وزیر خارجہ سے وفاق المدارس العربیہ کے سیکرٹری جنرل و معروف عالم دین قاری حنیف جالندھری کی ملاقات

اسلام آباد :وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی سے وفاق المدارس العربیہ کے سیکرٹری جنرل اور معروف عالم دین قاری حنیف جالندھری نے جمعرات کو وزارتِ خارجہ میں ملاقات کی۔بات چیت کے دوران اتحاد بین المسلمین، بین المذاہب ہم آہنگی سمیت باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال ہوا۔وزیر خارجہ نے کہا کہ جیسے ہی مسجد اقصٰی پر حملے کا واقعہ منظر عام پر آیا ۔

وزیر اعظم عمران خان کی قیادت میں ہم نے، ان مظالم کو رکوانے کیلئے او آئی سی کے پلیٹ فارم سے مشترکہ لائحہ عمل اختیار کرنے اور بھرپور آواز اٹھانے کا فیصلہ کیا ۔ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ او آئی سی کی ایگزیکٹو کمیٹی کا بروقت ہنگامی اجلاس بلانے کے حوالے سے سعودی قیادت کا اقدام قابلِ ستائش ہے۔فلسطین کے معاملے پر “سیز فائر “کی صورت ہمیں ابتدائی مقصد میں کامیابی حاصل ہوئی ۔

فلسطین کے حوالے سے، اقوام متحدہ ہیومن رائٹس کونسل کے خصوصی اجلاس میں او آئی سی کی جانب سے پاکستان نے قرارداد پیش کی اور فلسطین میں انسانی حقوق کی پائمالیوں کی آزادانہ تحقیقات کیلئے کمیشن کا مطالبہ کیا، اسے واضح اکثریت سے منظور کر لیا گیا۔قاری حنیف جالندھری نے کہا کہ نہتے فلسطینیوں پر جاری اسرائیلی مظالم کے باعث پوری امت مسلمہ شدید اضطراب کا شکار تھی جس طرح پاکستان نے ترکی اور دیگر اسلامی ممالک کے ساتھ مل کر اقوام متحدہ جنرل اسمبلی میں آواز بلند کی وہ قابلِ ستائش ہے۔

قاری حنیف جالندھری نے مقبوضہ جموں و کشمیر میں جاری انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں اور بھارتی جارحیت کو موثر انداز میں عالمی فورمز پر اٹھانے اور بہترین خارجہ پالیسی اپنانے پر وزیر خارجہ کو مبارکباد پیش کی