صوبائی وزیر اوقاف پیر سید سعید الحسن کا تین روزہ عالمی کانفرنس   ''ریاست مدینہ اور سید ہجویر کی تعلیمات'' کی افتتاحی تقریب سے خطاب

صو فیائے کرام نے روادارانہ فلاحی معاشرے کی بنیاد رکھی  ان کے فکر و عمل کا یہ فیضان پنجاب بلکہ پورے خطے کو اسلامی تعلیمات کی روشنی سے منورکر رہا ہے انتہا پسندی اور دہشت گردی جیسے عوامل کی بیخ کنی کے لئے اولیائے کرام کی تعلیمات کو اپنی زندگی کا نصب العین بنا نا ہو گا صوفیائے کرام امن کے علمبر دار اور انسان دوستی کے امین ہیں،ان کی تعلیمات کو اپنا کردنیا بھر میں اسلام کا پرچم بلند کر سکتے ہیں

صوبائی وزیر اوقاف پیر سید سعید الحسن کا تین روزہ عالمی کانفرنس   ''ریاست مدینہ اور سید ہجویر کی تعلیمات'' کی افتتاحی تقریب سے خطاب

لاہور : صوبائی وزیر اوقاف پیر سید سعید الحسن نے آج تین روزہ عالمی کانفرنس   ''ریاست مدینہ اور سید ہجویر کی تعلیمات'' کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ صو فیائے کرام نے روادارانہ فلاحی معاشرے کی بنیاد رکھی،وہ اخوت،بھائی چارے،انسان دوستی،ایثار و محبت جیسے جذبوں سے آراستہ ہے۔ان کے فکر و عمل کا یہ فیضان پنجاب بلکہ پورے خطے کو اسلامی تعلیمات کی روشنی سے منورکر رہا ہے۔ اس مو قع پراس موقع پرسیکر ٹری اوقاف ڈاکٹر ارشاد احمد،ڈائریکٹر جنرل طاہر رضا بخاری،ایڈمنسٹریٹر داتا دربار خالد محمود سندھو کے علاوہ علمائے کرام، دانشور ومفکرین،اور سکالز نے خصوصی شرکت کی۔

انہوں نے کہا کہ آج بین ا لمسالک کی ہم آہنگی اور بین المذاہب مکالمہ کے فروغ اور انتہا پسندی اور دہشت گردی جیسے عوامل کی بیخ کنی کے لئے ضروری ہے کہ ہم ان اولیائے کرام کی تعلیمات کو اپنی زندگی کا نصب العین بنا کر ان پر عمل پیرا ہوں۔صوفیائے کرام امن کے علمبر دار اور انسان دوستی کے امین ہیں۔ان بزرگان دین کی در گاہیں آج بھی ظاہری و باطنی علوم کے عظیم مراکز کی حیثیت رکھتے ہیں۔وقت کی اہم ضرورت ہے کہ ان بزرگان دین کی تعلیمات کو اپنا کر ہم دوبارہ دنیا بھر میں اسلام کا پرچم بلند کر سکتے ہیں۔ پر امن بقائے باہمی کے قیام اور روادارانہ فلاحی معاشرے کے قیام کے لئے صوفیائے کرام کی تعلیمات کی ترویج وقت کی اہم ضرورت اور خدمات مینارہ نور کی حیثیت رکھتی ہیں۔