کن بالی ووڈ اداکاروں کا تعلق پاکستان سے ہے؟

دلیپ کمار، راج کپور اور شاہ رُخ خان ایسے بھارتی اداکار نہیں ہیں کہ جن کا آبائی گھر پاکستان میں ہے بلکہ اس فہرست میں دیگر بالی ووڈ فنکار بھی شامل ہیں جن میں دیو آنند، بلراج ساہنی اور سنیل دت ہیں

کن بالی ووڈ اداکاروں کا تعلق پاکستان سے ہے؟

بالی ووڈ فنکاروں کے پاکستان سے تعلق کی بات کریں تو صرف دلیپ کمار، راج کپور اور شاہ رُخ خان ایسے بھارتی اداکار نہیں ہیں کہ جن کا آبائی گھر پاکستان میں ہے بلکہ اس فہرست میں دیگر بالی ووڈ فنکار بھی شامل ہیں جن میں دیو آنند، بلراج ساہنی اور سنیل دت ہیں۔

دلیپ کمار:

بالی ووڈ کے لیجنڈری اداکار دلیپ کمار کا گھر پاکستان کے صوبہ خیبر پختون خوا کے شہر پشاور کے تاریخی قصہ خوانی بازار کے محلہ خداداد میں واقع ہے، ایک وقت تھا کہ یہ علاقہ رہائشی ہوتا تھا لیکن اب یہ ایک کاروباری مراکز بن گیا ہے۔

اداکار دلیپ کمار 11 دسمبر 1922ء کو اسی گھر میں پیدا ہوئےتھے لیکن 1930ء میں وہ اپنا آبائی گھر چھوڑ کر بھارت کے شہر ممبئی چلے گئے تھے جہاں اُنہوں نے اپنے کیرئیر کا آغاز کیا۔

ممبئی منتقل ہونے کے بعد دلیپ کمار نے 1988ء میں اپنے اس آبائی گھر کا دورہ کیا تھا جبکہ سال 1997ء میں دلیپ کمار کو پاکستان کے سب سے بڑے شہری اعزاز نشانِ امتیاز سے بھی نوازا گیا تھا۔دوسری جانب 2013ء میں بھارتی اداکار کے اس گھر کو وفاقی حکومت نے قومی ورثہ قرار دیا تھا۔

راج کپور کی حویلی:

کپور حویلی پشاور کے علاقے دلگران میں واقع ہے، بھارتی فلم انڈسٹری کو متعدد نامور سُپر اسٹارز دینے والے کپور خاندان کی ایک نسل اسی حویلی میں پیدا ہوئی تھی۔ کپور حویلی کی تعمیر کی بات کریں تو اس قدیم حویلی کو راج کپور کے والد دیوان کپور نے تعمیر کروایا تھا لیکن تقسیمِ برصغیر کے بعد یہ خاندان بھارت منتقل ہوگیا تھا۔

شاہ رخ خان:

دیگر بھارتی لیجنڈری اداکاروں کی طرح بالی ووڈ کنگ شاہ رخ خان کا آبائی گھر بھی پشاور میں ہی واقع ہے، شاہ رخ کے والد تاج محمد خان پشاور کے اسی گھر میں پیدا ہوئے تھے جبکہ شاہ رخ خان نے اپنی جوانی کے کئی دن بھی اس گھر میں گُزارے تھے۔

 

اس وقت شاہ رخ خان کے اس آبائی گھر میں اُن کی کزن نور جہاں مقیم ہیں جو کئی بار اپنے کزن سے ملنے کے لیے ممبئی بھی جاچکی ہیں، نور جہاں کے ساتھ اس گھر میں اُن کا 12سالہ بیٹا بھی مقیم ہے جس کا نام اُنہوں نے شاہ رخ خان ہی رکھا ہے۔

دیو آنند:

دھرم دیو پشوری آنند کا شمار بالی ووڈ کے لیجنڈری اداکاروں میں ہوتا ہے، یہ وہ بھارتی اداکار ہیں جو 26 ستمبر 1923 میں پاکستان کے صوبہ پنجاب کے علاقے شکر گڑھ (موجودہ ضلع نارووال) میں پیدا ہوئے۔ دیو آنند کا تعلق برطانوی بھارت کے ایک دولت مند خاندان سے تھا اُن کے والد پشوری لال آنند ایک ایڈووکیٹ تھے۔ دیوآنند نے گورنمنٹ کالج لاہور سے انگریزی ادب میں ایم اے مکمل کیا اور تعلیم پوری ہوئی تو دیو آنند نے 1946 میں ممبئی کی فلمی دنیا کا رخ کرلیا  جہاں اُنہوں نےاپنی مقبولیت کے جھنڈے گاڑے۔

بلراج ساہنی:

بلراج ساہنی بھارت کے ایک معروف فلم و اسٹیج اداکار تھے جو تقسیم ہند سے قبل یکم مئی 1913 کو پاکستان کے شہر راولپنڈی میں پیدا ہوئے اور اسی شہر میں پلے بڑے ہوئے۔ انہوں نے گورنمنٹ کالج یونیورسٹی (لاہور) سے انگریزی ادب میں تعلیم حاصل کی۔ لاہور سے انگریزی ادب میں ماسٹر ڈگری مکمل کرنے کے بعد وہ واپس راولپنڈی چلے گئے جہاں اُنہوں نے اپنے خاندانی کاروبار میں کام شروع کیا۔

 

1930 کی دہائی کے آخر میں بلراج ساہنی اپنی اہلیہ سمیت راولپنڈی سے بھارت چلے گئے چونکہ بلراج ساہنی ہمیشہ سے ہی اداکاری میں دلچسپی رکھتے تھے تو اسی شوق کو دیکھتے ہوئے انہوں نے اپنے اداکاری کے کیریئر کا آغاز انڈین پیپلز تھیٹر ایسوسی ایشن (آئی پی ٹی اے) کے ڈراموں سے کیا جبکہ 1946میں اُنہوں نے اپنے فلمی کیرئیر کا آغاز کیا۔ اسٹیج اور فلمی دُنیا میں اپنا ایک نام بنانے والے بھارتی اداکار بلراج ساہنی 1973 میں اس دُنیا سے رخصت ہوگئے۔

سنیل دت:

بالی ووڈ کے معروف اداکار اور سنجے دت کے والد سنیل دت کا تعلق بھی پاکستان سے ہے وہ 6 جون 1929 کو پاکستان کے شہر جہلم میں پیدا ہوئے۔ سنیل دت نے بہت سی تاریخی فلمیں کیں جن میں مدر انڈیا، پڑوسن، سجاتہ، میرا سایہ، جانی دشمن اور ملن جیسی کامیاب فلمیں شامل ہیں۔ سنیل دت نے اپنے دور میں سبھی بڑی پروڈکشنز اور ہدایت کاروں کے ساتھ کام کیا، ان کی آخری فلم منا بھائی ایم بی بی ایس تھی جس میں اُنہوں نے اپنے بیٹے سنجے دت کے ساتھ کام کیا تھا۔