صوبائی وزیر محنت و انسانی و وسائل انصر مجید نیاری کی ہدایت پر لیبر قوانین کی خلاف ورزی پر ایکشن

296 اداروں کیخلاف کارروائی، 1034 چالان کئے گئے کم سے کم اجرت کی ادئیگی یقینی بنائی جائے، انصر مجید خان

صوبائی وزیر محنت و انسانی و وسائل انصر مجید نیاری کی ہدایت پر لیبر قوانین کی خلاف ورزی پر ایکشن

لاہور: صوبائی وزیر لیبر و انسانی وسائل انصر مجید نیازی کی ہدایت پر محکمہ لیبر کی کم از کم اجرت کی عدم ادائیگی کیخلاف تین روزہ مہم جاری ہے۔ صوبائی وزیر نے سیکرٹری لیبر محمد عامر جان اور ڈی لیبر فیصل نثار کو کم سے کم اجرت کی ادائیگی اور مزدوروں کے حقوق کے تحفظ کو یقینی بنانے کیلئے اقدامات کرنے کی ہدایت کی تھی۔ تین روزہ مہم کے دوران خصوصی طور پر تشکیل دی گئی ٹیموں نے لاہور کے پوش ایریا میں واقع اداروں کی چیکنگ کی۔

ڈاریکٹر لیبر ساؤتھ ریجن لاہور ضیغم عباس مظہر نے بتایا کہ کم از کم اجرت عدم ادائیگی کے خلاف ورزی پر  296 اداروں کا اچانک دورہ کیا جن میں انٹرنیشنل اور ملٹی نیشنل برانڈز، فوڈ چینز، کارپوریشنز کے دفاتر، غیر ملکی برانڈز، سٹورز، بنک اور ریسٹورانٹ وغیرہ شامل تھے۔ ان اداراجات میں کم از کم اجرت کی ادائیگی، لمبے کام کے اوقات کار، اوور ٹائمز اور دیگر مراعات کی عدم ادائیگی کرنے والوں کے خلاف ضابطہ کی کاروائی عمل میں لائی گئی اور کم از کم اجرت کی ادائیگیوں اور دیگر مراعات میں تحصیص کی وجہ سے 1034 چالان کئے گئے۔

انہوں نے بتایا کہ اس مہم کا مقصد معاشرے میں مزدور  کے استحصال کا خاتمہ ہے اور سول سوسائٹی کو اس جرم کی بیخ کنی سے آگاہی دلانا ہے۔   انہوں نے کہا کہ ہر مزدور کا پیدائیشی حق ہے کہ وہ با عزت زندگی بسر کرے اور تاکہ معیشت کا پہیہ تیزی سے  چلے۔  اس میں  تمام متعلقہ اداروں کو اپنا اپنا کردار ادا کرنا چائیے۔