وزیر اعظم کی ہدایت پر پنجاب حکومت نے صوبے میں قبضہ مافیا کیخلاف آپریشن کے احکامات جاری کر دیئے

 قبضہ مافیا معاشرے کا ناسور ہیں، سرکاری کیساتھ ساتھ نجی اراضی پر بھی قبضے ختم کرائے جائیں: چیف سیکرٹری

وزیر اعظم کی ہدایت پر پنجاب حکومت نے صوبے میں قبضہ مافیا کیخلاف آپریشن کے احکامات جاری کر دیئے

لاہور: وزیر اعظم اور وزیر اعلیٰ پنجاب کی خصوصی ہدایت پر پنجاب حکومت نے صوبے بھر میں قبضہ مافیا کیخلاف آپریشن شروع کرنے کیلئے تمام ڈویژنل کمشنرز، ڈپٹی کمشنرز، آرپی اوز اور ڈی پی اوز کواحکامات جاری کر دیئے۔احکامات چیف سیکرٹری پنجاب کی زیر صدارت اعلیٰ سطح کے اجلاس کے دوران جاری کئے گئے۔ اجلاس میں ایڈیشنل چیف سیکرٹری، ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ، آئی جی پنجاب،ڈائریکٹر جنرل اینٹی کرپشن اسٹبلشمنٹ، کمشنر لاہور، سی سی پی او لاہور اور ڈپٹی کمشنر لاہور نے شرکت کی جبکہ ڈویژنل کمشنرز، آرپی اوز،ڈپٹی کمشنرز اور ڈی پی اوز ویڈیو لنک کے ذریعے شریک ہوئے۔

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے چیف سیکرٹری پنجاب نے کہا کہ قبضہ مافیا معاشرے کا ناسور ہیں۔ انہوں نے افسران کو ہدایت کی کہ غیر قانونی قبضوں میں ملوث عناصر سے کسی قسم کی رعائیت نہ برتی جائے اور انکے خلاف قانون کیمطابق سخت کارروائی عمل میں لائی جائے۔انہوں نے کہا کہ سرکاری اراضی کیساتھ ساتھ نجی ملکیت کی زمینوں پر بھی قبضے ختم کرائے جائیں تاکہ عام آدمی کویہ اعتماد ہو کہ حکومت انکے جان ومال کا  تحفظ کی ذمہ داری احسن انداز میں اداکر رہی ہے۔

چیف سیکرٹری نے واگزار کرائی جانیوالی اراضی  کے استعمال سے متعلق جامع پلان تیار کرنے  سے متعلق بھی ہدایات جاری کیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ اورآئی جی پنجاب قبضہ مافیا کیخلاف آپریشن کی خود نگرانی کریں گے اور پیش رفت کا روزانہ کی بنیاد پر جائزہ لیں گے۔آئی جی پنجاب نے پولیس افسران کو حکم دیا کہ وہ قبضہ مافیا کیخلاف آپریشن کی مانیٹرنگ خود کریں اور اسے کسی صورت ماتحت اہلکاروں پر نہ چھوڑیں۔  انہوں نے کہا کہ قبضہ مافیا کیخلاف آپریشن میں پولیس کی طرف سے انتظامیہ کو مکمل معاونت فراہم کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ اوورسیز پاکستانی ملک کا اثاثہ ہیں، انکی محنت کی کمائی سے خریدی گئی زمینوں کو واگزار کرا کر ترجیحی بنیادوں پر انکی داد رسی کی جائے۔