سندھ حکومت کی درخواست مسترد، الیکشن کمیشن کا بلدیاتی انتخابات مقررہ تاریخ پر کرانے کا فیصلہ

سندھ حکومت کی درخواست مسترد، الیکشن کمیشن کا بلدیاتی انتخابات مقررہ تاریخ پر کرانے کا فیصلہ

اسلام آباد: الیکشن کمیشن نے سندھ حکومت کے اعتراضات کو مسترد کرتے ہوئے ضمنی و بلدیاتی انتخابات مقررہ تاریخ پر ہی منعقد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

 ایک روز قبل سندھ حکومت نے سیلاب اور پولیس نفری میں کمی کو جواز بناتے ہوئے الیکشن کمیشن کو خط لکھا تھا کہ صوبے میں بلدیاتی انتخابات آگے بڑھادیے جائیں تاہم ذرائع کا کہنا ہے کہ الیکشن کمیشن نے اس بار سندھ حکومت کا اعتراض مسترد کرنے کا حتمی فیصلہ کرلیا ہے اور طے کیا ہے کہ انتخابات اپنے وقت پر ہوں گے۔

الیکشن کمیشن کے ذرائع کا کہنا ہے کہ سندھ حکومت کی جانب سے اٹھائے گئے اعتراضات میں کوئی ٹھوس وجہ نہیں ہے کہ الیکشن پراسیس معطل کیا جائے، سندھ حکومت کو الیکشن کمیشن عملے کے سوا جتنی فورس دستیاب ہے اس میں بہتر انتظامات کیے جاسکتے ہیں۔

ذرائع کے مطابق الیکشن کمیشن کی جانب سے سندھ حکومت کو جلد باضابطہ جواب دیا جائے گا۔

واضح رہے کہ سندھ حکومت نے الیکشن کمیشن کو خط لکھ کر بلدیاتی انتخابات کرانے سے معذوری ظاہر کی تھی۔ سندھ حکومت نے کراچی اور حیدر آباد ڈویژن میں تین ماہ کے لیے انتخابات مؤخر کی درخواست کی تھی۔

قومی و صوبائی اسمبلی کے 12 حلقوں میں ضمنی انتخاب 16 اکتوبر کو ہوں گے۔ سندھ بلدیاتی انتخابات کے دوسرے مرحلے میں کراچی ڈویژن کے تمام اضلاع میں پولنگ 23 اکتوبر کو ہوگی۔