امر یکا کی عطیہ کردہ ویکسین موڈرنا کی25 لاکھ خوراکوں کی کھیپ اسلام آباد پہنچ گئی ہے،وزارت صحت

امر یکا کی عطیہ کردہ ویکسین موڈرنا کی25 لاکھ خوراکوں کی کھیپ اسلام آباد پہنچ گئی ہے،وزارت صحت

اسلام آباد :امریکا کی جانب سے عطیہ کی گئی ویکسین موڈرنا کی25 لاکھ خوراکوں کی ایک اورکھیپ اسلام آباد پہنچ گئی ہے،کوویکس کی سہولت کے ذریعے ویکسین کی تقسیم کرنے کے طریقہ کار کے تحت موڈرنا (ایم آر این اے۔ 1273)کووڈ۔19 ویکسین کی2.5 ملین خوراکوں کی ایک اورکھیپ اسلام آباد پہنچ گئی۔وزارت صحت کے حکام نے کہا ہے کہ امریکا کی جانب سے عطیہ کی گئی ویکسین پاکستان میں قومی سطح پر فراہم کی جائے گی اور ویکسین لگانے کے منصوبے کی روشنی میں ترجیحی گروہوں کو لگائی جائے گی۔

پاکستان میں اب تک 30 لاکھ افراد کو مکمل طور پر ویکسین کی جا چکی ہے اور 13.5 ملین ویکسین کی ایک خوراک لگوا چکے ہیں۔ اقوام متحدہ کے بچوں کے فنڈ (یونیسف) کی طرف سے جاری ایک پریس ریلیز میں کہا گیا ہے کہ وبا شروع ہونے کے بعد سے ملک میں کووڈ۔ 19 کے نو لاکھ ساٹھ ہزار سے زیادہ کیس رپورٹ ہوئے اور کم از کم 22379 افراد اس بیماری کی وجہ سے لقمہ اجل بن چکے ہیں۔انھوں نے کہا کہ عالمی ادارہ صحت نے انتہائی موثر انداز میں ویکسین لگانے کی مہم چلانے کے حکومتِ پاکستان کے اقدام کو سراہا ہے۔

پاکستان نے ملک میں دستیاب کووڈ-19 ویکسین کو برابری کے اصول کو مدِ نظر رکھتے ہوئے تقسیم کیا ہے اور اسی طرح یہ پاکستان کے ان دور دراز علاقوں تک بھی پہنچ پائی ہے جسسے لاکھوں افراد کو کورونا وائرس جیسی وبا سے تحفظ حاصل ہوا ہے۔ سائنسی حل اور مختلف ممالک کے مابین یکجہتی کی وجہ سے صدی کے صحت کے سب سے بڑے خطرے سے نمٹنے میں مدد ملی ہے۔

پاکستان میں یونیسف کی نمائندہ عائدہ گیرمانے کہا کہ یونیسف کوویکس کی سہولت کے ذریعے پاکستان کو ویکسین کے فراخ دلانہ عطیات دینے پر امریکی حکومت کا شکریہ ادا کرتا ہے۔انھوں نے کہا کہ زیادہ مقدار میں ویکسین محفوظ رکھنے کے لئے سردخانوں کی گنجائش میں اضافہ کیا جائے گا اور خطرات کے بارے میں آگہی کے لئے ابلاغِ عامہ کے ذریعے عوام میں شعور و آگہی میں اضافہ کیا جائے گا۔ اس سے ویکسین پر لوگوں کے اعتماد میں اضافہ ہوگا۔

وائرس کے پھیلا کو روکنے کے لئے ان حفاظتی اقدامات پر سختی سے عمل کرنا انتہائی ضروری ہے۔ ان اقدامات میں کم از کم 20 سیکنڈ تک صابن سے ہاتھ دھونا یا سینیٹائزر استعمال کرنا شامل کریں، ماسک پہنیں اور دوسرے لوگوں سے کم از کم چھ فٹ دور رہیں،زیادہ رش والی جگہوں پر جانے سے پرہیز کریں اورکووڈ۔19 کی علامات ظاہر ہونے کی صورت میں گھر تک محدود رہیں۔ کویکس کی سہولت کا مقصد آمدنی کی سطح سے قطع نظر تمام شریک ممالک کو منظور شدہ ویکسین تک تیز رفتار، مساوی اور منصفانہ رسائی فراہم کرکے 2021 کے آخر تک عالمی وبا کے شدید مرحلے سے نمٹنے میں مدد کرنا ہے۔ یہ سہولت فرنٹ لائن ہیلتھ کیئر اور سماجی کارکنوں کے ساتھ ساتھ دیگر زیادہ خطرات سے دوچار گروہوں اور کمزور افراد کا تحفظ ممکن بناتی ہے