افغان پناہ گزینوں کی 40 سال سے زائد عرصہ تک میزبانی پاکستان کی اعلی اخلاقی اقدار کی عکاسی کرتی ہے، صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کا کراچی لٹریچر فیسٹیول سے خطاب

افغان پناہ گزینوں کی 40 سال سے زائد عرصہ تک میزبانی پاکستان کی اعلی اخلاقی اقدار کی عکاسی کرتی ہے، صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کا کراچی لٹریچر فیسٹیول سے خطاب

کراچی۔:صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ پوری دنیا پناہ گزین کو قبول نہیں کرتی جو عام رجحان ہے لیکن پاکستان نے 40 سال سے زائد عرصے تک افغان مہاجرین کی میزبانی کی جو پاکستان کی اعلی اخلاقی اقدار کی عکاسی کرتی ہے۔یہ بات انہوں نے مقامی ہوٹل میں 13ویں کراچی لٹریچر فیسٹیول (KFL) میں مہمان خصوصی کی حیثیت سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔انہوں نے کے ایل ایف کے منتظمین کی کاوشوں کو سراہتے ہوئے کہا کہ اس طرح کی تقریبات پاکستان کے کیلنڈر کا حصہ بن چکی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ یہ انسانی فطرت ہے کہ جب وہ ایک ہی چیز کو پڑھتے یا سیکھتے ہیں تو اس سے مختلف نتیجہ اخذ کرتے ہیں اور ان کا مختلف نقطہ نظر بنتا ہے۔انہوں نے پاکستان بنانے میں قومی شاعر ڈاکٹر علامہ محمد اقبال اور بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناح کی جدوجہد اور کردار پر بھی روشنی ڈالی۔صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے پشاور دھماکے پر بھی دلی دکھ کا اظہار کیا۔

انہوں نے کہا کہ یورپ نے اپنی تاریخ میں بہت سے بحرانوں اور تنازعات کا سامنا کیا ہے اور یورپ میں جنگوں کو روکنا اقوام متحدہ کی کامیابی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ انہیں کتابیں پڑھنے کا شوق ہے اور آج کل بہت زیادہ معلومات مفت دستیاب ہیں۔

اس موقع پرصدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے انگریزی فکشن، اردو شاعر، بہترین کتاب سندھی، بہترین کتاب بلوچی، بہترین کتاب پنجابی اور پشتو میں بہترین کتاب سمیت مختلف کیٹیگریز میں KLF ایوارڈز پیش کیے۔قبل ازیں تقریب سے صد ایمریٹس نیشنل اکیڈمی آف پرفارمنگ آرٹس (NAPA) ضیا محی الدین، منیجنگ ڈائریکٹر آکسفورڈ یونیورسٹی پریس ارشد سعید حسین نے بھی خطاب کیا۔