صوبائی وز یر اعجاز عالم آگسٹین کی زیر صدارت صوبائی ٹاسک فورس انسانی حقوق کا اجلاس

اجلاس میں ایڈیشنل چیف سیکرٹری شوکت علی اور تمام متعلقہ محکموں کے سیکرٹریز کی شرکت کم عمر شادی کی روک تھام کے لئے قانون سازی کی جا رہی ہے پنجاب کے تمام اداروں میں لفظ عیسائی نہیں ،مسیحی لکھا جائے گا: اعجاز عالم آگسٹین 

صوبائی وز یر اعجاز عالم آگسٹین کی زیر صدارت صوبائی ٹاسک فورس انسانی حقوق کا اجلاس

لاہور: صوبائی وزیر انسانی حقوق و چیئرمین ٹاسک فورس اعجاز عالم آگسٹین اور ایڈیشنل چیف سیکرٹری پنجاب، وائس چیئرمین ٹاسک فورس خواجہ شوکت علی کی زیر صدارت ایس اینڈ جی اے ڈے کے کمیٹی روم میں ہیومن رائٹس ٹاسک فورس کا چھٹا اجلاس منعقد کیا گیا۔ اجلاس میں انسانی حقوق کی پالیسی، 2018 اور ایچ آر پالیسی پر عمل درآمد کے ایکشن پلان کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔ ڈپٹی سیکرٹری انسانی حقوق محمد یوسف نے شرکاءکو بتایا کہ پنجاب میں انسانی حقوق کی پالیسی تشکیل دیئے جانے کے بعد تمام متعلقہ محکموں کو مطلع کیا گیا تاکہ پالیسی کے نفاذ کے لئے ایک مربوط حکمت عملی طے کی جاسکے جبکہ تین سال کی تکمیل کے بعد جنوری 2021 میں پالیسی کا تفصیلی جائزہ لیا جائے گا۔

اجلاس میں پی ٹی ایف کی 5 ویں میٹنگ میں ہونیوالے فیصلوں پر عمل درآمد کا تفصیلی جائزہ لیا گیا ، 02فیصد کوٹہ پر عملدرآمد برائے مذہبی اقلیتی طلبہ،خواجہ سراﺅں،بچوں،خواتین،سینئر شہری وغیرہ کے حوالے سے اقدامات کا بھی جائزہ لیا گیا۔ صوبائی وزیر اعجاز عالم آگسٹین نے اپنے خطاب کے دوران کہاکہ بلا شبہ صوبہ پنجاب کو یہ منفرد اعزاز حاصل ہے کہ تحریک انصاف کے دور حکومت میں پنجاب ہیومن رائٹس پالیسی 2018 کا نفاذ یقینی بنایا گیا جبکہ اس کو ہر سطح پر متعارف کرایا گیا ہے او اس کااردو ترجمہ بھی یقینی بنایا جا چکا ہے جبکہ اس پالیسی میں دیئے گئے تمام اقدامات کے لئے ایک ایکشن پلان تیار کیا گیا تھا، جس کے لئے صوبائی سطح پر ہیومن رائٹس ٹاسک فورس کو فعال کیا گیا ہے اور تمام صوبائی محکموں اور ضلعی حکومتوں کی جانب سے اس پالیسی پر عمل درآمد کے لئے اقدامات یقینی بنائے جا چکے ہیں۔

انہوں نے کہاکہ کم عمری کی شادی کی روک تھام کے لیئے موثر قانون سازی کی جا رہی ہے ،شادی کی عمر 18سال یقینی بنائی جا رہی ہے جبکہ فیصلہ کیا جا چکا ہے کہ پنجاب کے تمام اداروں میں لفظ عیسائی نہیں بلکہ مسیحی لکھا جائےگااور تمام تعلیمی اداروں میں انسانی حقوق کی تعلیم کو فروغ دینے کے حوالے سے اقدامات کیئے جا رہے ہیں ۔انہوں نے تمام متعلقہ محکموں کے سیکرٹریز کو ہدایت کی کہ انسانی حقو ق کے حوالے سے ایکشن پلان پر عملدرآمد یقینی بنانے کے لئے مزید موثر اقدامات کیئے جائیں تاکہ انسانی حقوق کا تحفظ یقینی بنایا جا سکے۔اجلاس میں پی اینڈ ڈی، ہوم، آبپاشی، زراعت، کوآپریٹیوز، زکات اینڈ عشر، ایچ ای سی، ایس ای ڈی، پبلک پراسیکیوشن، وومن ڈیویلمپنٹ، لوکل گورنمنٹ اور دیگر متعلقہ اداروں کے نمائندگان نے شرکت کی۔