چئیرمین این ڈی ایم اے کی آفات کے خطرات کے تدارک اور ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لیے بین الاقوامی فورم میں پاکستان کی نمائندگی 

چئیرمین این ڈی ایم اے کی آفات کے خطرات کے تدارک اور ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لیے بین الاقوامی فورم میں پاکستان کی نمائندگی 

اسلام آباد:.چئیرمین این ڈی ایم اے لیفٹیننٹ جنرل اختر نواز ستی نے آفات کے خطرات کے تدارک اور ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے حوالے سے بین الاقوامی فورم میں پاکستان کی نمائندگی کی۔ وزارت برائے ایمرجنسی مینجمنٹ،چین کی جانب سے فورم کاآن لائن انعقادکیا گیا جہاں پاکستان اور چین کے علاوہ متعدد ممالک بشمول بیلاروس، برونائی، کمبوڈیا،انڈونیشیا، قازکستان، کرغستان، لاوؤس، منگولیا، موزنبیق، روس، سعودی عرب، سربیااور ترکی کے وزراء اور آفات کے خطرات کے تدارک اور ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے شعبوں سے منسلک نمائندگان نے شرکت کی۔ علاوہ ازیں اقوام متحدہ اور فلاحی اداروں کے نمائندگان بھی بڑی تعداد میں شریک تھے۔ 

 فورم میں چئیرمین این ڈی ایم اے نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ Belt and Road Initiativesمیں سی پیک کے تحت تمام شعبہ جات میں کرونا وبا کے پھیلاؤ کے باوجود ترقیاتی منصوبوں پر کام جاری رہا، سی پیک نے دونوں ممالک کے مابین دوستی،ترقیاتی منصوبوں میں شراکت داری اور تعاون کو تقویت بخشی ہے۔ 

 چئیرمین این ڈی ایم اے نے اقتصادی اور سماجی ترقی کو یقینی بنانے کے لیے آفات کے خطرات کے تدارک کے نظام کومزید مستحکم کرنے پر زور دیا اور کہا کہ حکومت پاکستان نے آفات سے نمٹنے اورموئثروبروقت اقدامات کے لیے ایک جامع اور مربوط نظام تشکیل دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ درپیش مسائل کے حل کے لیے تمام ممالک کو مشترکہ طور پراقدمات اٹھانے اور صلاحیتی دائرہ کار کو بڑھانے کی اشد ضرورت ہے۔ 

اس موقع پرتمام ممالک کی جانب سے بیجنگ قراردادمنظور کی گئی جس کا مقصد آفات کے خطرات کے تدارک اورمنظم انداز میں باہم معاونت کیساتھ     Belt and Road Initiativesکے تحت مشترکہ اقدامات کو یقینی بنانا ہے۔