سٹیٹ بینک آف پاکستان، کووڈ۔19 سے نمٹنےکے لیے ہسپتالوں ، میڈیکل سنٹرز کے لئے 10 ارب روپے قرضہ جات کی منظوری

سٹیٹ بینک آف پاکستان، کووڈ۔19 سے نمٹنےکے لیے ہسپتالوں ، میڈیکل سنٹرز کے لئے 10 ارب روپے قرضہ جات کی منظوری

اسلام آباد :بینکوں اور مالیاتی اداروں نے سٹیٹ بینک آف پاکستان کی کووڈ۔19 سے نمٹنے کی ری فنانس فسیلٹی فار کمبیٹنگ کووڈ (آر ایف سی سی) کے تحت ہسپتالوں ، میڈیکل سنٹرز کے لئے 10 ارب روپے سے زیادہ کے قرضہ جات کی منظوری دی ہے۔

سٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) کی رپورٹ کے مطابق گزشتہ ایک سال کے دوران مجموعی طور پر 48 مختلف ہسپتالوں اور طبی مراکز کی جانب سے 16.668ارب روپے کے قرضہ کے لئے آر ایف سی سی کے تحت اپلائی کیا ہے ۔ وصول ہونے والی درخواستوں میں سے سکیم کے تحت بینکوں اور مالیاتی اداروں کی جانب سے اب تک قرضہ کے حصول کی 44 درخواستیں منظور کرتے ہوئے ہسپتالوں اور طبی مراکز کے لئے 10.523 ارب روپے کے قرضہ جت کی منظوری دی گئی ہے۔

واضح رہے کہ آسان شرائط اور کم ترین شرح سود پر آر ایف سی سی کے تحت ہسپتال اور طبی مرکز 30 جون 2021 تک درخواستیں جمع کرا سکتے ہیں۔ رپورٹ کے مطابق سکیم کے آغاز پر ابتدائی طور پر ہسپتالوں اور طبی مراکز کے لئے آر ایف سی سی کے تحت زیادہ سے زیادہ 200 ملین روپے کے قرضہ کی حد مقرر کی گئی تھی۔

بعد از اں نئے ہسپتالوں اور طبی مراکز کی تعمیر و غیرہ کی ضروریات کے پیش نظر سٹیٹ بینک آف پاکستان نے قرضہ کی مقررہ حد میں اضافہ کرتے ہوئے قرضہ کی حد کو ایک ارب روپے تک بڑھا دیا تھا۔

اس وقت ہسپتالوں یا طبی مراکز کی توسیع یا نئے منصوبوں کی تعمیر کے لئے آر ایف سی سی کی سہولت کے تحت کم ترین شرح سود اور آسان شرائط پر ایک ارب روپے تک قرضہ حاصل کیا جا سکتا ہے