وزیر خزانہ پنجاب مخدوم ہاشم جواں بخت کی زیر صدارت پنجاب لوکل گورنمنٹ ایکٹ19کے سیکشن 319کے تحت اجلاس

اجلاس میں ممبر پنجاب اسمبلی عبدالرحمان رانا،سیکرٹری فنانس عبداللہ سنبل، سیکرٹری لوکل گورنمنٹ قاضی جاوید احمد، سینئیر کنسلٹنٹ فیصل رشید، ممبر فیڈرل بورڈ ریونیو رعنا احمدکے علاوہ محکمے کے متعلقہ افسران نے شرکت کی

وزیر خزانہ پنجاب مخدوم ہاشم جواں بخت کی زیر صدارت پنجاب لوکل گورنمنٹ ایکٹ19کے سیکشن 319کے تحت اجلاس

لاہور: وزیر خزانہ پنجاب مخدوم ہاشم جواں بخت کی زیر صدارت پنجاب لوکل گورنمنٹ ایکٹ19کے سیکشن 319کے تحت وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی تشکیل کردہ عبوری کمیٹی کا  دوسرا اجلاس محکمہ خزانہ کے کمیٹی روم میں منعقد ہوا۔ اجلاس میں ممبر پنجاب اسمبلی عبدالرحمان رانا،سیکرٹری فنانس عبداللہ سنبل، سیکرٹری لوکل گورنمنٹ قاضی جاوید احمد، سینئیر کنسلٹنٹ فیصل رشید، ممبر فیڈرل بورڈ ریونیو رعنا احمدکے علاوہ محکمے کے متعلقہ افسران نے شرکت کی۔ اجلاس کا مقصد پنجاب لوکل گورنمنٹ فنانس کمیشن کی تشکیل کے لیے کمیٹی ممبران کی موجودگی میں قرعہ اندازی کے ذریعے لوکل گورنمنٹ کے چار سربراہوں کا انتخاب اور محکمہ لوکل گورنمنٹ کی جانب سے پیشہ ورانہ سرگرمیوں کے لائسسنس پر عائد فیس کی خاتمے کی تجاویز کی منظوری تھا۔

صوبائی وزیر نے کمیٹی ممبران کی موجودگی بہت سی پرچیوں میں سے چار پرچیاں اُٹھا کر سربراہان کا انتخاب کیا۔پیشہ وارانہ لائسسنس کے اجراء کے لیے فیس میں کمی یا خاتمے کی مختلف تجاویز کا جائزہ لیتے ہوئے صوبائی وزیر نے محکمہ لوکل گورنمنٹ کو ہدایت کی کہ وہ کاروبار میں آسانی کے اشاریوں کا جائزہ لیکر واضح کریں کہ آیا فیس میں کمی یا خاتمے سے کاروبار میں آسانی کے انڈیکس میں کوئی فرق آئے گا یا نہیں۔ اگر فیس کے خاتمے سے حقیقاً کاروبار میں آسانی پیدا ہو سکتی ہے توقانون کے مطابق انھیں یہب تجوے پنجاب لوکل گورنمنٹ فنانس کمیشن میں زیر بحث لایا جائے گی۔ بعدازاں کمیشن اپنی سفارشات کابینہ کی سٹینڈنگ کمیٹی برائے فنانس اینڈ ڈویلپمنٹ میں پیش کرے گا جہاں فیس کے خاتمے کی منظوری لی جائے گی۔ کمیٹی میں یہ نقظہ بھی واضح کیا گیا کہ کمیشن فیس میں کمی کا اختیار خود فنانس کمیشن کے پاس بھی ہو گا۔

قانون کے تحت نئے ایوارڈ کی منظوری تک بلدیاتی اداروں کو فنڈز کا اجراء2017کے عبوری فنانس کمیشن ایوارڈ کے تحت کیا جائے گا۔ بلدیاتی انتخابات کے بعد عبوری کمیٹی میں منتخب کردہ چاروں لوکل گورنمنٹ سربراہان کی قانونی حیثیت محکمہ قانون سے وضاحت کے بعد واضح کر دی جائے گی۔ اجلاس کو بتایا گیاکہ پنجاب لوکل گورنمنٹ فنانس کمیشن کی تشکیل کے لیے باقی چار اراکین پنجاب اسمبلی سے نامزد کیے جائیں گے دو ممبرز کا انتخاب لیڈر آف ہاؤس کریں گے جبکہ دو ممبرز اپوزیشن لیڈر کی جانب سے منتخب کیے جائیں گے۔ اس مقصد کے لیے اپوزیشن لیڈر سے سفارشات طلب کی جا چکی ہیں۔