بنگلورو: ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی، نوجوان کو روڈ سیفٹی امتحان پاس کرنا پڑا

بنگلورو: ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی، نوجوان کو روڈ سیفٹی امتحان پاس کرنا پڑا

ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی عام بات ہے، موٹرسائیکل سوار تو اکثر ٹریفک سگنلز اور ون وے کی خلاف ورزی کرتے دکھائی دیتے ہیں، لیکن یہ عمل عادت بن جائے تو پھر اس کی سزا بھی بھگتنا پڑتی ہے۔ بنگلورو میں ٹریفک پولیس نے ایک نوجوان پروفیشنل کشور (فرضی نام) کو چھ ماہ کے دوران ٹریفک قوانین کی 15 مرتبہ خلاف ورزی کرتے ہوئے پکڑا گیا، یہ خلاف ورزیاں زیادہ تر بغیر ہیلمٹ کے بائیک چلانے اور ٹریفک سگنل توڑنے پر مبنی تھیں۔ گزشتہ روز ٹریفک پولیس اہلکار بنگلورو کے علاقے مرتھاہلی میں واقع کشور  کے گھر پہنچے اور اسے کہا کہ اسکی موٹرسائیکل ضبط کرلی جائے گی۔

 

 24 سالہ کشور کا کہنا تھا کہ اس نے اس وقت ٹریفک سگنل کو کراس کیا جب وہ اورنج تھے، لہٰذا اسے سگنل توڑنے میں شمار نہیں کیا جانا چاہیے۔ تاہم اس نے ہیلمٹ نہ پہننے کا اقرار کیا۔کشور کی موٹرسائیکل قبضے میں لینے کے بعد ٹریفک پولیس کشور کو شمالی بنگلورو کے علاقے تھنی ساندرا میں ٹریفک ٹریننگ اینڈ روڈ سیفٹی انسٹیٹیوٹ لیکر گئے۔ جہاں اسے دو گھنٹے کی ٹریفک قواعد و ضوابط پر مبنی کلاس اٹینڈ کرنا پڑی۔

انسٹرکٹرز نے کشور کو بتایا کہ اس نے اورنج سگنل کو جس طرح کراس کیا وہ  سگنل توڑنے میں شمار ہوتا ہے۔ کشور پر سی سی ٹی وی فوٹیج کی بنیاد پر جرمانہ کیا گیا۔ جس میں دکھایا گیا کہ سگنل کے سرخ ہونے سے کچھ لمحے قبل اس نے سگنل کراس کیا۔ بعدازاں کشور کو دو گھنٹے کے تھیوری اور پریکٹیکل امتحان میں شریک ہونا پڑا، جس میں 100 میں سے 60 نمبر لینا ہوتے ہیں۔ تاہم کشور نے 75 نمبر لیے۔ بعدازاں کشور کو ایک سرٹیفکیٹ جاری کیا گیا جس میں اس کے روڈ سیفٹی پروگرام میں شریک ہونے اور اسے کلیئر کرنے کا اندراج ہے۔ اس سرٹیفکیٹ کی بنیاد پر اسکی موٹر سائیکل اسے واپس کردی گئی۔ کشور جیسے 180 دیگر موٹرسائیکل چلانے والے اور قوانین کی خلاف ورزی کرنے والے بھی اس امتحان میں شریک ہوئے تھے۔