سعودی عرب، تجارتی و کاروباری مراکز بند،لاکھوں غیر ملکی ملازمین متاثر

نجی شعبے کے سعودی مالکان جن کا کورونا کی وجہ سے کاروبار بْری طرح متاثر ہوا ہے، وہ اپنے ملازمین کی تنخواہوں اور ڈیوٹی کے گھنٹوں میں کٹوتی کر سکتے ہیں

سعودی عرب، تجارتی و کاروباری مراکز بند،لاکھوں غیر ملکی ملازمین متاثر

ریاض(عالمین نیوز) سعودی مملکت میں کورونا کی وبا پھیلنے کے بعد تجارتی و کاروباری مراکز اور کئی اہم صنعتیں وقتی طور پر بند ہو چکی ہیں۔جس کے باعث یہاں پر مقیم لاکھوں غیر ملکی ملازمین مالی طور پر بْری طرح متاثر ہو رہے ہیں۔ خصوصاً نجی شعبے کے ملازمین کا حال سب سے بْرا ہے جو کئی ہفتوں سے کام نہ کرنے کی وجہ سے اپنی اْجرت سے محروم ہو چکے ہیں۔سعودی وزارت محنت و سماجی بہبود کی جانب سے اعلان کیا گیا ہے کہ نجی شعبے کے سعودی مالکان جن کا کورونا کی وجہ سے کاروبار بْری طرح متاثر ہوا ہے، وہ اپنے ملازمین کی تنخواہوں اور ڈیوٹی کے گھنٹوں میں کٹوتی کر سکتے ہیں۔ تاہم اس کے لیے ملازمین کی رضا مندی لازمی ہو گی۔ مالک اور ملازم مل بیٹھ کر طے کر لیں کہ ڈیوٹی کے اوقات میں کتنی کمی کی جائے، تاکہ اسی حساب سے تنخواہوں کی ادائیگی ہو سکے۔