ملک کو بدنام کرنے والوں کے خلاف سخت اقدامات کئے جائیں گے، وزیر داخلہ شیخ رشید

 ملک کو بدنام کرنے والوں کے خلاف سخت اقدامات کئے جائیں گے، وزیر داخلہ شیخ رشید

اسلام آباد :وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ ملک کو بدنام کرنے والوں کے خلاف سخت اقدامات کئے جائیں گے اگرنواز شریف وطن واپس آنا چاہتے ہیں تو ان کو 24 گھنٹوں میں تمام مطلوبہ دستاویزات گھر پر فراہم کریں گے، ای پاسپورٹ شروع کیا جارہا ہے، 191 ممالک کو آن لائن پاسپورٹ کی سہولت دے رہے ہیں ،پی ڈی ایم 23 کی بجائے 30مارچ کو احتجاج کرلے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کو ڈائریکٹوریٹ جنرل آف امیگریشن اینڈ پاسپورٹس میں مختلف نئے اقدامات کے آغاز کے موقع پر منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

وفاقی وزیر داخلہ نے کہا کہ میری کوشش ہے کہ 100 دنوں میں ای پاسپورٹ پاکستان میں شروع ہوجائے اور آئندہ سال کے آغاز پر ای پاسپورٹ کی سہولت مل سکے، شہریت کی منسوخی اور ایمرجنسی سفری دستاویزات کی آن لائن سہولت بھی فراہم کررہے ہیں۔

ای پاسپورٹ کے حوالے سے رکاوٹ دور کرلی گئی ہے، ڈی جی ایف آئی اے کو ہدایت کی ہے کہ ملک میں منی لانڈرنگ اورڈالر بحرا ن پیدا کرنے والوں کے خلاف کاروائی کی جائے پاکستان میں جو بھی غریبوں کا خون چوستے ہیں ان کے خلاف کارروائی کریں گے،ملک کی بدنامی کا باعث بننے والوں پرہاتھ ڈالا جائے گا،رانا شمیم کا نام پی این آئی ایل میں ڈال دیا ہے اور ان کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کی سفارش کی ہے، جس کے لئے اجلاس ہوگا۔

وزیر داخلہ نے کہا کہ لوگوں کو 24 گھنٹوں میں پاسپورٹ مل رہا ہے اگر نواز شریف بھی واپس آنا چاہتے ہیں اور ان کو بھی پاسپورٹ چاہئے تو انہیں بھی 24 گھنٹوں میں تمام مطلوبہ دستاویزات ان کے گھر پہنچا سکتے ہیں لیکن وہ نہیں آئیں گے۔

وزیر داخلہ شیخ رشید نے کہا کہ پی ڈی ایم 23 کی بجائے 30 مارچ کو احتجا ج کر لے کیونکہ 23 مارچ کی تیاری اور پریڈ کے حوالے سے جی ٹی روڈ پر نقل و حمل ہوتی ہے ، میں نہیں چاہتا کہ اس حوالے سے کو ئی شکایت پیدا ہو، پی ڈی ایم نے کمپنی کی مشہوری کیلئے 4ماہ کا ٹائم دیا ہے، اپوزیشن صحیح طریقے سے تحریک چلانے کا انتخاب نہیں کرسکی جس سے حکومت کو کوئی خطرہ نہیں۔