سڈنی میں لاک ڈاؤن میں توسیع کردی گئی

سڈنی میں لاک ڈاؤن میں توسیع کردی گئی

آسٹریلوی حکام کا کہنا ہے کہ لاک ڈاؤن کے دوران جو لوگ ضروری سامان کی خریداری کے لیے گھر سے باہر نکلے تھے بعد میں ان کے کورونا ٹیسٹ بھی مثبت آگئے ہیں جس کی وجہ سے وبا کا پھیلاؤ  تیز ہوا ہے جبکہ ہمیں بہت افسوس ہے کہ اس وبا کی وجہ سے لوگوں کے کاروبار اور خاندان متاثر ہوئے ہیں۔

حکام نے مزید کہا کہ ملک کی 10 فیصد آبادی کو  ویکسین لگا دی گئی ہے جبکہ مثبت کیسز میں اضافے کے ساتھ فائزر  ویکسین کی سپلائی میں کمی ہوئی ہے اس لیے بہت سے شہری اس سال کے اختتام تک ویکسین لگوانے سے محروم رہیں گے۔

حکومتی نمائندے گلیڈیز  بیری جیکلیان کے مطابق ملک میں عالمی وبا سے 31 ہزار افراد متاثر اور  910 اموات ہوئی ہیں جبکہ سڈنی میں اس سال 330 مثبت کیسز سامنے آئے ہیں۔

کورونا وائرس کی بھارتی قسم پھیلنے اور ویکسین کی عدم فراہمی کے پیش نظر حکومت نے لاک ڈاؤن میں ایک ہفتے کی توسیع کرکے اسے 16 جولائی تک برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا ہے جس دوران تمام تعلیمی ادارے بھی بند رہیں گے۔