ٹرمپ آئین سے ہٹ گئے،ہمارے پاس صرف آئین ہے اور اس پر چلنا ہے،کولن پاول

مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے فوج بلانے کی ضرورت نہیں تھی،مارک ایسپر

ٹرمپ آئین سے ہٹ گئے،ہمارے پاس صرف آئین ہے اور اس پر چلنا ہے،کولن پاول

واشنگٹن(عالمین) امریکہ میں فوج کی تعیناتی کے معاملے پر سابق فوجی امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف آہنی دیوار بن گئے۔سابق امریکی وزیر خارجہ ریٹائرڈ جنرل کولن پاول امریکی صدر پر برس پڑے۔ انہوں نے تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ڈونلڈ ٹرمپ آئین سے ہٹ گئے ہیں جبکہ ہمارے پاس آئین ہے اور ہمیں آئین کے مطابق چلنا ہے۔ امریکی صدر کے خلاف جو سابق آرمی افسران نے کہا اس پر فخر ہے۔امریکی وزیر دفاع مارک ایسپر نے فوج کی تعیناتی کی مخالفت کرتے ہوئے کہا تھا کہ مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے فوج بلانے کی ضرورت نہیں تھی۔ان کا کہنا تھا کہ سیکیورٹی صورتحال میں فوج کی تعیناتی آخری حل ہونا چاہیے۔سابق امریکی وزیر دفاع جیمزمیٹس نے بھی امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے اقدامات پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا تھا کہ ڈونلڈ ٹرمپ میری زندگی میں پہلا صدر ہے جو امریکیوں کو متحد نہیں کر سکا، اپنے ہی شہروں کو میدان جنگ بنانے کی سوچ مسترد کرنی ہو گی۔واضح ررہے اس سے قبل سابق امریکی صدر باراک اوباما نے امریکہ میں احتجاجی مظاہروں کی حمایت کرتے ہوئے پولیس اصلاحات کرنے کا مطالبہ کیا تھا۔