میاں اسلم اقبال کی زیر صدارت وزیر اعلی آفس میں اجلاس،منڈیوں کی حالت بہتر بنانے کیلئے ضروری اقدامات کا فیصلہ

پنجاب ایگری کلچریل مارکیٹنگ ریگولیٹری اتھارٹی کی کارکردگی اور اس کی استعداد کار بڑھانے کے امور کا جائزہ لیا گیا  اشیائے ضروریہ کی سپلائی چین کو ریگولیٹ کرنا کیلئے پامرا کو متحرک اور فعال کردار ادا کرنا ہے،صوبائی وزیر صنعت وتجارت

 میاں اسلم اقبال کی زیر صدارت وزیر اعلی آفس میں اجلاس،منڈیوں کی حالت بہتر بنانے کیلئے ضروری اقدامات کا فیصلہ

لاہور:صوبائی وزیر صنعت وتجارت میاں اسلم اقبال کی زیر صدارت آج وزیر اعلی آفس میں اجلاس منعقد ہوا۔جس میں پنجاب ایگری کلچریل مارکیٹنگ ریگولیٹری اتھارٹی کی کارکردگی اور اس کی استعداد کار بڑھانے کے امور کا جائزہ لیا گیا۔ چیئرمین پامرا نوید انور بھنڈر  نے ادارے کے تنظیمی ڈھانچے اور کارکردگی بارے بریفنگ دی۔اجلاس میں منڈیوں کی حالت بہتر بنانے کیلئے ضروری اقدامات کا فیصلہ کیا گیا اور صوبے میں نئی منڈیوں اور ہرڈویژن میں ایک ماڈل منڈی کے قیام کیلئے پلان طلب کیا گیا۔

صوبائی وزیر زراعت حسین جہانیاں گردیزی،مشیر اقتصادی امور سلمان شاہ،چیئرمین پامرا نوید انور بھنڈر،سربراہ مانیٹرنگ یونٹ فضیل عباس،ڈی جی انڈسٹریز،ڈجی پامرا اور متعلقہ افسران نے اجلاس میں شرکت کی۔صوبائی وزیر صنعت وتجارت میاں اسلم اقبال نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ مہنگائی پر قابو پانے کیلئے اشیائے ضروریہ کی سپلائی چین کو ریگولیٹ کرنا ضروری ہے۔منڈیوں کے جدید نظام کیلئے تشکیل دیئے گئے ادارے پامرا کو متحرک اور فعال کردار ادا کرنا ہے۔

صوبائی وزیر نے کہا کہ منڈیوں میں صفائی وستھرائی کو بہتر کیاجائے اور کسانوں کی آسان رسائی یقینی بنائی جائے۔اشیائے ضروریہ کی صوبے کی تمام منڈیوں میں دستیابی یقینی بنائی جائے اورجدید ٹیکنالوجی کی مدد سے منڈیوں میں آنے والی اشیاء کا ڈیٹا مرتب کیے جائے۔صوبائی وزیر صنعت وتجارت نے کہا کہ صوبے میں نئی منڈیوں کے قیام کے لئے سٹیک ہولڈرز کے مشاورت سے میکانزم بنانا ہوگا۔

میاں اسلم اقبال نے کہا کہ منڈیوں میں کسانوں کو اپنی اجناس کی براہ راست فروخت کی سہولت کے لئے علیحدہ پلیٹ فارم قائم کیے جائیں اورصوبے کے ماڈل بازاروں میں کسانوں کو یہ سہولت دی گئی ہے۔انہوں نے کہا کہ ماڈل بازاروں کا دائرہ کار بڑھانے کیلئے منصوبہ بندی کر لی گئی ہے۔صوبائی وزیر زراعت حسین جہانیاں گردیزی نے کہا کہ زراعت قومی معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہے۔جدید زرعی ٹیکنالوجی کو فروغ دے کر پیداواری صلاحیت میں اضافہ کیا جاسکتا ہے۔