میاں اسلم اقبال کی زیر صدارت پنجاب سمال انڈسٹریز کارپوریشن کے بورڈ کا اجلاس

پنجاب روز گار سکیم کے خدوخال اور قواعد و ضوابط کی منظوری،پنجاب روز گار کی انقلابی سکیم کا آغاز رواں ماہ ہوگا سکیم کے تحت نیا کاروبار شروع کرنے، موجود کاروبار کے فروغ اور کرونا سے متاثرہ کاروبار کی بحالی کے لئے آسان قرضے دئیے جائیں گے پنجاب روزگار کی انقلابی سکیم کے تحت ایک کروڑ روپے تک کا آسان قرضہ حاصل کیا جاسکے گا:صوبائی وزیر صنعت وتجارت میاں اسلم اقبال

 میاں اسلم اقبال کی زیر صدارت پنجاب سمال انڈسٹریز کارپوریشن کے بورڈ کا اجلاس

لاہور :صوبائی وزیر صنعت و تجارت میاں اسلم اقبال کی زیر صدارت پنجاب سمال انڈسٹریز کارپوریشن کے بورڈ کا اجلاس منعقد ہوا۔پیسک کے کمیٹی روم میں ہونے والے اجلاس میں پنجاب روز گار سکیم کے خدوخال اور قواعد و ضوابط کی منظوری دی گئی۔ اجلاس میں بورڈ کے پرائیویٹ ممبر کیلئے ایک اجلاس میں شرکت کے لئے 15 ہزار روپے اعزازیہ کی بھی منظوری دی گئی۔ پنجاب روز گار کی انقلابی سکیم کا آغاز رواں ماہ میں ہوگا۔درخواست کی پراسیسنگ فیس2ہزار روپے اور قرض کی منظوری 20روزمیں ہوگی جبکہ قرض واپسی کی مدت 2سے5سال تک ہوگی اور گریس پیریڈ 6ماہ ہوگا۔

صوبائی وزیر صنعت و تجارت میاں اسلم اقبال نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ صوبے میں معاشی و کاروباری سرگرمیاں بڑھانے کے لئے پنجاب روز گار سکیم لائی جارہی ہے۔سکیم کے تحت نیا کاروبار شروع کرنے، موجود کاروبار کے فروغ اور کرونا سے متاثرہ کاروبار کی بحالی کے لئے آسان قرضے دئیے جائیں گے۔اس انقلابی سکیم کے تحت ایک کروڑ روپے تک کا آسان قرضہ حاصل کیا جاسکے گا انہوں نے کہا کہ یونیورسٹیوں، فنی تعلیمی اداروں کے گریجوایٹس، دستکار اور ہنرمند اس سکیم سے فائدہ اٹھائیں گے۔

یہ سکیم صوبے میں غربت اور بے روزگاری میں کمی لانے کے حوالے سے معاون ثابت ہوگی، صوبائی وزیر نے کہا کہ پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ کے تعاون سے آن لائن پورٹل بھی تیار کیا گیا ہے۔آسان شرائط پر قرضوں کی تقسیم کا عمل نہایت شفاف اور میرٹ پر ہوگا۔سیکرٹری صنعت و تجارت کیپٹن ریٹائرڈ ظفر اقبال،ایم ڈی پیسک مدثر ریاض ملک اور دیگر بورڈ ممبران نے اجلاس میں شرکت کی۔