الزام لگا کر کورونا کو ختم نہیں کیا جا سکتا، چین

چین وہ پہلا ملک تھا جس نے عالمی ادارہ صحت کو کورونا پھیلنے سے متعلق اطلاعات پیش کیں: جا لی جیان

الزام لگا کر کورونا کو ختم نہیں کیا جا سکتا، چین

بیجنگ(عالمین نیوز )چین کی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کورونا وائرس کے بارے میں حقیقت چھپانے کے تعلق سے چین کے خلاف امریکی وزیر خارجہ کے الزام کو سختی کے ساتھ مسترد کر دیا ہے۔چینی وزارت خارجہ کے ترجمان جا لی جیان نے امریکی وزیر خارجہ کے اس بیان کو مسترد کردیا ہے کہ چین نے کورونا وائرس کے پھیلنے کے بارے میں حقائق کو چھپایا ہے۔انھوں نے کہا کہ چین وہ پہلا ملک تھا جس نے عالمی ادارہ صحت کو کورونا پھیلنے سے متعلق اطلاعات پیش کیں۔چین کی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کورونا وائرس پھیلنے کے مسئلے کو سیاسی رنگ دینے کی امریکی کوشش کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ کورونا وائرس کے بارے میں حقائق چھپانے اور عدم شفافیت کی سوچ بے بنیاد اور دنیا کی خواہش کے برخلاف ہے۔چینی دفترخارجہ کے ترجمان جا لی جیان نے کہا کہ وائرس سرحدوں، نسلوں اور سماجی نظام کو نہیں پہچانتا اور تمام ممالک اپنے عوام کی جان کو ترجیحات میں قرار دیں اور اس سلسلے میں کسی کوشش سے دریغ نہ کریں۔انہوں نے کہا کہ دوسروں پر الزام لگانے سے وائرس ختم نہیں ہوگا۔