صوبائی وزیر زراعت سید حسین جہانیاں گردیزی کی زیر صدارت محکمہ لائیو سٹاک و ڈیری ڈویلپمنٹ کی کارکردگی کاجائزہ اجلاس

صوبائی وزیر لائیو سٹاک و ڈیری ڈویلپمنٹ سردار حسنین بہادر دریشک، سیکرٹری لائیو سٹاک کیپٹن(ر)ثاقب ظفر،ایڈیشنل سیکرٹری پلاننگ لائیو سٹاک خالد چوہدری کے علاوہ چیف منسٹر سپیشل مانیٹرنگ یونٹ کے ہیڈ فصیل آصف نے بھی شرکت کی

صوبائی وزیر زراعت سید حسین جہانیاں گردیزی کی زیر صدارت محکمہ لائیو سٹاک و ڈیری ڈویلپمنٹ کی کارکردگی کاجائزہ اجلاس

لاہور : صوبائی وزیر زراعت سید حسین جہانیاں گردیزی کی زیر صدارت محکمہ لائیو سٹاک و ڈیری ڈویلپمنٹ کی کارکردگی کاجائزہ اجلاس نیو منسٹر بلاک کمیٹی روم میں منعقد ہوا۔ صوبائی وزیر لائیو سٹاک و ڈیری ڈویلپمنٹ سردار حسنین بہادر دریشک، سیکرٹری لائیو سٹاک کیپٹن(ر)ثاقب ظفر،ایڈیشنل سیکرٹری پلاننگ لائیو سٹاک خالد چوہدری کے علاوہ چیف منسٹر سپیشل مانیٹرنگ یونٹ کے ہیڈ فصیل آصف نے بھی شرکت کی۔ صوبائی وزیر زراعت سید حسین جہانیاں گردیزی نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں دودھ کی پیداوار کو بڑھانے کی ضرورت ہیاور اس عمل میں پرائیویٹ سیکٹر کی شمولیت ضروری ہے۔

مویشیوں اور جانوروں  کو خالص غیر ملکی بریڈ پر انحصار کرنا پڑتا ہے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ جانوروں کی مقامی ویکسین کے معیار کو بین الاقوامی سٹینڈ رڈز کے مطابق لایا جائے۔موٹے تازے جانوروں کو پالنے کے عمل کو پرومٹ کیا جائے۔کم عمر کٹوں کو ذبح کرنے پر پابندی ہونی چاہیے۔انہوں نے کہا کہ محکمہ لائیو سٹاک کو ماضی کی خامیوں کو دور کرکے اپنی استعداد کار کو بڑ ھاکرایک پلان مرتب کرنے کی ضرورت ہے تاکہ اپنے اہداف کے حصول کو ممکن بنایا جاسکے۔محکمہ لائیو سٹاک کے مجموعی پروگرام کو گائے فوکس کی بجائے بھینس فوکس بنایا جائے۔ صوبائی وزیر زراعت نے کہا کہ ایک ماڈل پراجیکٹ کے تحت مویشی پالنے والے چراہوں کو عالمی معیار کی تربیت فراہم کرنے کی ضرورت ہے۔ویٹنری ڈاکٹروں کو پیشہ ورانہ تربیت کی سہولت فراہم کی جائے۔

صوبائی وزیر لائیو سٹاک سردار حسنین بہادر دریشک نے اجلاس کو دودھ کے پاسچرائزیشن اور پاکنگ پر عمل درآمد کرنے کی افادیت کے بارے میں بتایا۔عملی افادیت کے پروگراموں کے آغاز سے ہی محکمہ لائیو سٹاک اپنے اہداف کے حصول کو ممکن بنا سکتا ہے۔محکمہ کوپالیسیوں میں تسلسل،استعداد کار بڑھانے اور لینڈ کے مؤثر استمعال میں لانے کی ضرورت ہے۔ قبل ازیں سیکرٹری لائیو سٹاک کیپٹن(ر)ثاقب ظفر نے محکمہ کے پنجاب کے 9ڈویژنز پر مشتمل گروتھ سٹرٹیجی کے بارے میں مکمل جائزہ پیش کیا۔ ڈیپارٹمنٹ کے فنکشنز،آگاہی پروگرام،حفاظتی امور،ایکسٹنیش سروسز،مشاورتی عمل،ویٹنری ایجوکیشن اور ہسپتال مینجمنٹ کے بارے میں بریفنگ دی۔انھوں نیمیٹنگ کو ڈیپارٹمنٹ کی ایچ آر پالیسی،پبلک سیکٹر کمپنیز،لائیو سٹاک ریسرچ،پروکیورئمنٹ،ویکسین پر وڈکیشن اور بلڈنگ انفراسٹرکچر کے بارے میں بتایا۔

سیکریٹری لائیو سٹاک نے محکمہ کی جانب سے جانوروں کی ورٹیکل آفزائش کو ترجیحی بنیادوں پر شروع کرنے کی افادیت پر روشنی ڈالی۔انھوں نیلائیو سٹاک ڈیپارٹمنٹ کے ڈیری و میٹ سیکٹر اور پالیسی معاملات میں درپیش چیلنجز سے میٹنگ کو آگاہ کیا۔  محکمہ کی دودھ اور گوشت کی پیداوار بڑھانے کی حکمت عملی پر بریف کیا۔اجلاس میں محکمہ لائیو سٹاک کے مستقبل کے منصوبوں کو قابل عمل بنانے کی مختلف تجاویز اور حکمت عملی پر بھی غور کیا گیا۔