حکومت لوٹے وسائل واپس لانا اور ماڈل ٹاؤن قاتلوں کو منطقی انجام تک پہنچانا اپنی ذمہ داری سمجھتی ہے: راجہ بشارت

انہوں نے کہا کہ ماڈل ٹاؤن کے شہدا کا خون انصاف مانگ رہاہے جن لوگوں نے قانون میں ہاتھ لیا ان کے خلاف قانون حرکت میں آئے گا وزیر قانون نے اسمبلی میں اپوزیشن کی ہنگامہ آرائی پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ پرائیویٹ ممبرڈے پر حکومتی بزنس نہیں ہوتا

حکومت لوٹے وسائل واپس لانا اور ماڈل ٹاؤن قاتلوں کو منطقی انجام تک پہنچانا اپنی ذمہ داری سمجھتی ہے: راجہ بشارت

لاہور:صوبائی وزیر قانون و پارلیمانی امور راجہ بشارت نے کہا ہے کہ حکومت لوٹے وسائل واپس لانا اور ماڈل ٹاؤن قاتلوں کو منطقی انجام تک پہنچانا اپنی ذمہ داری سمجھتی ہے.وہ آج پنجاب اسمبلی میں اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے.انہوں نے کہا کہ ماڈل ٹاؤن کے شہدا کا خون انصاف مانگ رہاہے. جن لوگوں نے قانون میں ہاتھ لیا ان کے خلاف قانون حرکت میں آئے گا. وزیر قانون نے اسمبلی میں اپوزیشن کی ہنگامہ آرائی پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ پرائیویٹ ممبرڈے پر حکومتی بزنس نہیں ہوتا.

اسمبلی کی روایات ہیں عوامی مفادات کے بل کو لیاجاتاہے. یہ بھی روایت رہی ہے کہ پرائیویٹ ممبر ڈے پر کورم کی نشاندہء نہیں ہوتی لیکن اپوزیشن کی جانب سے جو رویہ پرائیویٹ ممبر ڈے پر ہوا وہ غیر جمہوری ہے جس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے. انہوں نے کہا کہ اجلاس میں دو روز سے اپوزیشن کا رویہ جمہوری نہیں ہے. صوبے میں جمہوری روایات عوامی مسائل اور حکومت کو تجاویز دیں لیکن ان لوگوں کی ریلیف کی بات کی جاتی ہے جو اربوں روپے لوٹ کر باہر چلے گئے. نوازشریف کا نام لیتے تو وہ سزا یافتہ اور عدالتء مفرور ہیں اگر ان کی آواز ایوان میں اٹھائی جائے تو یہ عدالتوں کی توہین ہے. راجہ بشارت نے مزید کہا کہ ن لیگ واحد جماعت ہے جو چوری اور ملک لوٹنے کا سامنا کررہی ہے.

چور قیادت کو بچانے کیلئے کوئی پریشر استعمال کرنا چاہتے ہیں تو عمران خان نے واضح کیا چوروں کو این آر او نہیں ملے گا، چوروں کے ساتھ کوئی سمجھوتہ نہیں کرنا بلکہ لوٹی دولت واپس لانے کے لیے ہر ممکن اقدامات کرنے ہیں. ان کا کہنا تھا کہ یہ ایڈوائزری کمیٹی میں بھیگی بلی بن جاتے ہیں حالانکہ دیانت داری سے اپوزیشن کو ذمہ داری اٹھانی چاہئیے. یہ صوبے کے وسائل کرتے ایک لوٹ کر کھا گئے جو بچا اسے ضائع کررہے ہیں. وزیر قانون نے کہا کہ چئیرمین نیب نے موجودہ حکومت میں کرپٹ لوگوں سے سب سے زیادہ پیسے نکلوائے ہیں.