مجھے کوئی خصوصی ٹاسک نہیں دیا گیا،PDM جو کرے گی ویسا بھرے گی، وزیرداخلہ

مجھے کوئی خصوصی ٹاسک نہیں دیا گیا،PDM جو کرے گی ویسا بھرے گی، وزیرداخلہ

اسلام آباد: وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہاہے کہ مجھے کوئی خصوصی ٹاسک نہیں دیا گیا مگر میں جانتاہوں مجھے کیاکرنا ہے ‘پی ڈی ایم کے رنگ پسٹن بیٹھے ہوئے ہیں‘ یہ چوچوں کا مربہ ہے‘ اپوزیشن کی یہی صورتحال رہی تو عمران خان آئندہ الیکشن بھی جیتیں گے‘پی ڈی ایم جیسا کرے گی ویسا بھرے گی‘ آنے والے دن عمران خان کے لئے خوشخبریاں اور پی ڈی ایم کے لئے ناکامیاں لے کر آئیں گے۔ ملک میں انتشار پھیلانے کے لئے فنڈنگ کی جا رہی ہے، سچائی کی سیاست کو ناکام بنانے والے ناکام ہوں گے، ملک کو باہر نہیں اندر سے خطرہ ہے‘مخالفین شوق سے جلسے کریں ‘حکومت نہیں روکے گی‘شاہدرہ میں دہشت گردوں کا نیٹ ورک پکڑا گیا ہے، جلسوں سے عمران خان نہیں جائے گا، لوٹ مار اور منی لانڈرنگ کا دور ختم ہو گا۔ 

پی ڈی ایم مینار پاکستان پر عمران خان کے جلسے کی نقل نہیں کر سکتی، عمران خان مینار پاکستان پر جلسے سے اوپر گیا یہ نیچے جائیں گے۔ جمعہ کو وزارت داخلہ کا قلمدان سنبھالنے کے بعد اپنی رہائش گاہ پر بطور وزیر داخلہ پہلی پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وہ امن و امان کو بہتر بنائیں گے، جدید ترین بارڈر مینجمنٹ سسٹم لے کر آئیں گے اور امیگریشن نظام کو بہتر کیا جائے گا۔ ملک میں لوٹ مار اور منی لانڈرنگ کا دور ختم ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ وہ اسلام کے سپاہی اور ختم نبوت کے مجاہد ہیں اور عمران خان کے دور میں اللہ اور نبی کے علم کو بلند کریں گے۔ 

انہوں نے کہا کہ میں اقتدار کے بھوکے اور اتوار بازار سجانے والوں سے کہتا ہوں کہ ملک سب سے زیادہ اہم اور عزیز ہے‘سیاست دان وہ نہیں ہوتا جسے گلی گلی جا کر جلسوں کے دعوت نامے دینا پڑیں، بڑا لیڈر وہ ہوتا ہے جس میں سیاسی فہم اور بصیرت ہوتی ہے۔  پی ڈی ایم دو ماہ سے گلی گلی کوچے کوچے جا کرمہم چلا رہی ہے، ان کی امیدیں بر نہیں آئیں گی‘ مدارس اسلام کے مینار ہیں ‘ یہ عمران خان کی سچائی کی سیاست کو ناکام بنانا چاہتے ہیں۔ 

پی ڈی ایم عمران خان سے بات نہیں کرنا چاہتی تو دل کی بات بتائے کہ کس سے بات کرنا چاہتی ہے‘ نواز شریف کو بیرون ملک سے لانے کے لئے پوری کوشش کی جا رہی ہے، اس راہ میں حائل رکاوٹوں کو دور کیا جائے گا۔مشکل وقت میں ہی کام کرنے کا مزہ آتا ہے۔ یہ وزارت میرا بھی امتحان ہے،اس وزارت کو بھی میں چار چاند لگائوں گا۔پنجاب میں پکڑ دھکڑ کے حوالے سے سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ یہ صوبائی مسئلہ ہے ‘مولانا فضل الرحمن جب اسلام آباد آئیں گے تو وہ میرے پیر بھائی ہیں، ان کی کشمیری سبز چائے سے تواضع کروں گا۔ 

انہوں نے میڈیا پر زور دیا کہ وہ عوام کو مہنگائی میں کمی کے بارے میں بھی خبریں دے، لاپتہ افراد کے حوالے سے سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ یہ بہت اہم معاملہ ہے۔  دریں اثنا شیخ رشید نے کہا کہ جو ریڈ لائن عبور کرے گا دھر لیا جائے گا اور وزارت داخلہ کے علاوہ کچھ اور بھی ذمہ داریاں دی گئی ہیں جن کی تفصیل نہیں بتاسکتا۔