ٹورازم اتھارٹی کے قیام کے لئے اقدامات جاری ہیں:  مشیر سیاحت آصف محمود

محکمہ سیاحت میں باصلاحیت افراد کی کمی نہیں، ٹی ڈی سی پی کا استحکام ناگزیر ہے  وزیراعظم اور وزیراعلیٰ سیاحت کو ریونیو انجن بنانا چاہتے ہیں

 ٹورازم اتھارٹی کے قیام کے لئے اقدامات جاری ہیں:  مشیر سیاحت آصف محمود

لاہور :  مشیر وزیراعلیٰ برائے سیاحت آصف محمود نے کہا ہے کہ ٹورازم اتھارٹی کے قیام کے لئے اقدامات جاری ہیں۔ سیاحت کے فروغ کیلئے ٹورازم کارپوریشن (ٹی ڈی سی پی) کا استحکام ناگزیر ہے۔ محکمہ سیاحت میں باصلاحیت افراد کی کمی نہیں لیکن وسائل میں اضافے کیلئے روایتی سوچ بدلنا ہوگی۔ وہ اپنے اعزاز میں ٹی ڈی سی پی آفیسرز ویلفیئر ایسوسی ایشن کی استقبالیہ تقریب سے خطاب کر رہے تھے۔ ایم ڈی ٹورازم کارپوریشن تنویر جبار، ایڈیشنل سیکرٹری ٹورازم افتخار علی، جنرل منیجرر آپریشنز عاصم رضا، جنرل منیجر ایڈمن محسن عباس شاکر، جنرل سیکرٹری ایسوسی ایشن عابد شوکت اور دیگر افسروں نے بھی شرکت کی۔ ایم ڈی اور جنرل منیجر آپریشنز نے مشیر وزیراعلیٰ کو کارپوریشن کے امور پر بریفنگ دی۔

  مشیر سیاحت نے اس بات پر تشویش کا اظہار کیا کہ کورونا وبا کے باعث موسم گرما کی سیاحتی سرگرمیاں متاثر ہو رہی ہیں جس سے ٹی ڈی سی پی کے وسائل بھی متاثر ہوئے ہیں تاہم انہوں نے کہا کہ اس مشکل وقت کا ایک سبق یہ بھی ہے کہ ہمیں ایسے ہنگامی حالات میں بھی ذرائع آمدن جاری رکھنے کی منصوبہ بندی کرنا ہوگی تاکہ خدانخواستہ آئندہ کسی ایسی صورتحال میں مالی مشکلات سے بچا جاسکے۔ آصف محمود نے ٹی ڈی سی پی آفیسرز کی کارکردگی پر اظہار اطمینان کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم عمران خان اور وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارسیاحت کو ریونیو انجن بنانا چاہتے ہیں اور خوش قسمتی سے پنجاب کے سیاحتی مقامات اور آثار قدیمہ میں ریونیو جنریشن کی بھرپور صلاحیت ہے۔ مشیر وزیراعلیٰ نے اس عزم کا اظہار کیا کہ ٹورازم اتھارٹی کے قیام کی کوششیں تیز کی جائیں گی تاکہ محکمہ سیاحت کی استعدادکار میں مزید نکھار آئے۔