صوبائی وزیر ماحولیات محمد رضوان کی زیر صدارت ساہیوال کمشنر آفس میں اجلاس

صوبائی وزیر نے سموگ کنٹرول کرنے کے اقدامات کا تفصیلی جائزہ لیا

صوبائی وزیر ماحولیات محمد رضوان کی زیر صدارت ساہیوال کمشنر آفس میں اجلاس

لاہور : صوبائی وزیر ماحولیات باؤ محمد رضوان نے کہا ہے کہ فضائی آلودگی انسانی صحت کے لئے سب سے بڑا خطرہ ہے، جس سے نبرد آزما ہونا معاشرے کے تمام طبقات کی قومی و اخلاقی ذمہ داری ہے۔ عام آدمی کو بہتر ماحول کی فراہمی حقوق العباد ہے کیونکہ صاف فضا ہر شہری کا بنیادی حق ہے۔انہوں نے کہاکہ ضلعی انتظامیہ دھواں چھوڑنے والے گاڑیوں خصوصا گڈز ٹرانسپورٹ،ایندھن کے طور پر ری سائیکل میٹریل استعمال کرنے والی فیکٹریوں اور جعلی موبل آئل فروخت کرنے والوں کے خلاف فوری کارروائی کرے جو ماحولیاتی آلودگی اور سموگ کا سب سے بڑا سبب ہیں۔انہوں نے یہ بات کمشنر آفس ساہیوال میں ایک اجلاس سے خطا ب کرتے ہوئے کہی جبکہ اجلاس میں سموگ روکنے کے لئے جاری سرگرمیوں کا تفصیلی جائزہ لیا گیا -

صوبائی وزیر نے کہا کہ فصلوں کی باقیات جلانا سموگ کا سب سے بڑا سبب ہے جس سے کسانوں کو روکنا مسلسل آگہی دیئے بغیر ممکن نہیں، تمام متعلقہ محکمے عوام کو ماحولیاتی آلودگی کے انسانی صحت پر انتہائی مضر اثرات سے آگاہ کریں تا کہ عام آدمی اس اہم قومی مہم میں شامل ہو سکے -انہوں نے سڑکوں کے کنارے میونسپل ویسٹ کو آگ لگا کر جلانے پر بھی تشویش کا اظہار کیا اور تمام بلدیاتی اداروں پر زور دیا کہ وہ فی الفور اس کام کو روکیں - اجلاس میں ڈائریکٹر زراعت محمد فاروق جاوید نے بتایا کہ ساہیوال ڈویژن میں 6لاکھ18ہزار ایکٹر رقبے پر دھان کاشت کیا گیا جس کی باقیات کو جلانے کے 3905واقعات رپورٹ ہوئے جس پر 674افراد کے خلاف مقدمات درج کر کے 2لاکھ69ہزار روپے جرمانہ بھی عائد کیا گیا -سیکرٹری آر ٹی اے واصف یاسین نے بتایا کہ اب تک ڈویژن بھر میں دھواں چھوڑنے والی 2136گاڑیوں کے چالان کئے گئے جن پر 10لاکھ 81ہزار روپے جرمانہ عائد کیا گیا اور 173گاڑیوں کو بند کیا گیا -

صوبائی وزیر باؤ محمد رمضان نے تینوں اضلاع کے سیکرٹریز آر ٹی اے  کو ہدایت کی کہ وہ ماحولیاتی آلودگی میں 43 فیصد حصہ کی حامل دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں کیخلاف چیکنگ سخت کی جائے اور لوڈر ٹریلرز کے خلاف رات کو بھی کارروائی کی جائے -انہوں نے محکمہ ماحولیات کے ضلعی افسران کو ہدایت کی کہ ڈویژن مں موجود تمام فیکٹریوں کی لیبارٹری سے سہ ماہی چیکنگ کو ضروری بنایاجائے تاکہ کارخانوں سے پیدا ہونے والے خطر ناک دھوئیں اور آلودہ پانی کے اخراج کو روکا جا سکے -بعد ازاں صوبائی وزیر باؤ محمد رمضان نے اسسٹنٹ ڈائریکٹر ماحولیات عمیرہ شمشاد کے ہمراہ مختلف صنعتی اداروں اور بھٹہ خشت کا دورہ کیا اور وہاں آلودگی روکنے کے انتظاما ت کا جائزہ لیا - اجلاس میں کمشنر ساہیوال ڈویژن نادر چٹھہ،ڈپٹی کمشنرز بابر بشیر،صبا اصغر اور احمد کمال مان،ایڈیشنل کمشنر محمد شفیق ڈوگر،ڈائریکٹر زراعت محمد فاروق جاوید،اسسٹنٹ ڈائریکٹر ماحولیات عمیرہ شمشاد اور سیکرٹری آر ٹی اے واصف یاسین نے بھی شرکت کی۔