آنے والے ماہ و سال میں مزید نئے کھیلوں کے میدان مختص کئے جائیں گے : راجہ راشد حفیظ

پنجاب حکومت دیگر شعبوں کی طرح کھیلوں کے فروغ پر بھی یکساں توجہ دے رہی ہے تاکہ نوجوانوں کی جسمانی و ذہنی صلاحیتوں کو اجاگر اورتوانا بنا کر انہیں قومی تعمیر نو کے عمل میں شریک کیا جا سکے۔ وہ گذشتہ روز یہاں شاہین سادات گروپ کے زیر اہتمام منعقدہ کرکٹ ٹورنامنٹ کے اختتام پر تقسیم انعامات کی تقریب سے مہمان خصوصی کی حیثیت سے خطاب کررہے تھے

 آنے والے ماہ و سال میں مزید نئے کھیلوں کے میدان مختص کئے جائیں گے : راجہ راشد حفیظ

لاہور: صوبائی وزیر خواندگی و غیر رسمی بنیادی تعلیم راجہ راشد حفیظ نے کہا ہے کہ پنجاب حکومت دیگر شعبوں کی طرح کھیلوں کے فروغ پر بھی یکساں توجہ دے رہی ہے تاکہ نوجوانوں کی جسمانی و ذہنی صلاحیتوں کو اجاگر اورتوانا بنا کر انہیں قومی تعمیر نو کے عمل میں شریک کیا جا سکے۔ وہ گذشتہ روز یہاں شاہین سادات گروپ کے زیر اہتمام منعقدہ کرکٹ ٹورنامنٹ کے اختتام پر تقسیم انعامات کی تقریب سے مہمان خصوصی کی حیثیت سے خطاب کررہے تھے۔ڈاکٹر عبداللہ تبسم اور محمد حمزہ شفقات کے علاوہ معززین کی بڑی تعداد بھی اس موقع پر موجود تھی۔

راجہ راشد حفیظ نے کہا کہ کھیلوں کی ضرورت و اہمیت سے پاکستان تحریک انصاف کی لیڈر شپ بالخصوص وزیر اعظم عمران خان سے زیادہ کون واقف ہو سکتا ہے۔ چنانچہ وفاق اور دیگر صوبوں کی طرح پنجاب میں بھی نوجوانوں کو نہ صرف ان ڈور کھیلوں کی سہولیات بہم پہنچانے پر پوری توجہ دی جا رہی ہے بلکہ آؤٹ ڈور گیمز کا فروغ بھی ہماری ترجیحات میں شامل ہے۔ اس مقصد کیلئے کھیلوں کے نئے میدان بھی آباد کئے جا رہے ہیں۔ راولپنڈی شہر میں متعدد جگہوں پر کرکٹ سمیت دیگر گیموں کیلئے کھیلوں کے نئے میدان اس سلسلے میں ہماری ترجیحات کی نشاندہی کرتے ہیں۔

راجہ راشد حفیظ نے کہا کہ آنے والے ماہ و سال میں مزید نئے کھیلوں کے میدان مختص کئے جائیں گے اور وہاں نوجوانوں کو لازمی سہولیات بھی دی جائیں گی۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب کی تاریخ میں پہلی مرتبہ لٹریسی پالیسی دینے کے علاوہ ہم نے غیر رسمی بنیادی تعلیمی اداروں کے طلبہ کیلئے کھیلوں اور سیر و سیاحت کو لازمی کیا ہے۔ یہ وہ اقدامات ہیں جو کھیلوں کے فروغ کی عملی کاوشیں ہیں اور کوئی زبانی جمع تفریق نہیں۔

راجہ راشد حفیظ نے شاہین سادات گروپ کے منتظمین کو کرکٹ ٹورنامنٹ منعقد کرانے پر مبارکباد دی اور کہا کہ حکومت ایسی سرگرمیوں کی حوصلہ افزائی کرتی ہے۔ انہوں نے کھلاڑیوں کے ٹیلنٹ کو سراہتے ہوئے کہا کہ کسی بھی میدان میں ہمارے نوجوان انتہائی با صلاحیت ہیں جنہیں مواقع ملیں تو وہ اپنا اور قوم کا نام عالمی سطح پر بلند اور اس کے ساتھ ساتھ وہ قومی تعمیر نو کے عمل میں بھی با مقصد کردار ادا کر سکتے ہیں۔