کسی بھی ملک کی ترقی وخوشحالی میں نوجوان کلیدی کردار اد کر رہے ہیں: صوبائی وزیر محمدرضوان

 ماحول کی حفاظت اور اسکو بہترین بنانے میں نوجوان نسل فعال کردار ادا کرسکتی ہے: صوبائی وزیر ماحولیات

کسی بھی ملک کی ترقی وخوشحالی میں نوجوان کلیدی کردار اد کر رہے ہیں: صوبائی وزیر محمدرضوان

لاہور: صوبائی وزیر تحفظ ماحولیات محمد رضوان نے کہا ہے کہ پاکستان کی 64فیصد آبادی نوجوانوں پر مشتمل ہے، جو ملک کی مستقبل کی خوشحالی کے لئے ایک مثبت شگون ہے جبکہ ہمارے نوجوانوں کی امنگوں کی تکمیل حکومت کی ذمہ داری ہے تاہم حکومت وقت ایسے اقدامات یقینی بنا رہی ہے جس سے نوجوان نسل کیلئے تعلیم اورروزگار وغیرہ میں مواقع پیدا ہورہے ہیں تاکہ نوجوانوں کو صلاحیتوں کو بروئے کار لایا جا سکے۔انہوں نے کہاکہ اس بات میں کوئی شک نہیں کہ نوجوان نسل ماحول کے تحفظ اور بہتری کے لئے فعال کردار ادا کرسکتی ہے۔

نوجوان ماحولیاتی دوستانہ طریقوں کو اپنانے، مختلف مواد کی ری سائیکلنگ کے ساتھ ساتھ پانی اور بجلی جیسے وسائل کا تحفظ کرکے اپنے گھروں، اسکولوں اور نوجوانوں کی تنظیموں کو زیادہ ماحول دوست بنا سکتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار صوبائی وزیر نے گزشتہ روز محکمہ تحفظ ماحولیات کے کمیٹی روم میں مختلف یونیورسٹیز کے طلباء کے وفد سے ایک ملاقات کے دوران کیا۔ ملاقات میں ماحولیاتی تحفظ کے حوالے سے نوجوانوں کا کردار اور انکو درپیش مسائل بارے تفصیلی بات چیت کی گئی۔ وفد نے صوبائی وزیر کو بتایا کہ ماحولیاتی تحفظ میں نوجوانوں کو شامل کرنا نہ صرف نوجوانوں کے طرز عمل اور رویوں پر براہ راست اثر ڈالتا ہے بلکہ ممکنہ طور پر ان کے خاندانوں ہ پر بھی اثر ڈالتا ہے۔

ماحولیاتی تحفظ ایک وسیع موضوع ہے اور یہ ایک حقیقت ہے کہ ماحولیاتی مسائل دن بدن بڑھ رہے ہیں جبکہ عالمی سطح پر ماحولیاتی مسائل کی وجہ سے ہر ایک کو تشویش لاحق ہے تاہم نوجوان اپنی روز مرہ کی زندگی میں معمولی تبدیلیوں کی مدد سے ماحولیاتی آلودگی کو کم کر سکتے ہیں۔ انہوں نے صوبائی وزیر کو تجویز دی کہ عوام میں آگاہی پھیلانے کی اشد ضرورت ہے کہ پلاسٹک بیگ کے استعمال کی حوصلہ شکنی کی جائے جبکہ کمپیوٹر، بجلی کے آلات اور ری چارج ہونیوالی بیٹریاں ماحول کو خطرناک بنا رہی ہیں تاہم چیزوں کی ری سائیکلنگ کے ذریعے فائدہ اٹھایا جا سکتا ہے۔