وزیر صحت کا محکمہ پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کئیرمیں اعلی سطحی اجلاس

پنجاب کی تاریخ میں پہلی باراتنی کثیرتعدادمیں ویکسینیٹرز بھرتی کئے گئے  مدراینڈچائلڈ سنٹرز کومزید اپ گریڈ کیاجارہا،بچے کی ویکسینیشن کو یقینی بنایاجائے،وزیر صحت پنجاب

وزیر صحت کا محکمہ پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کئیرمیں اعلی سطحی اجلاس

 لاہور:صوبائی وزیر صحت ڈاکٹریاسمین راشدکا محکمہ پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کئیرکو جون2021تک امیونائزیشن کوریج کو90فیصدتک پہنچانے کی ڈیڈلائن دے دی ہیں۔ڈاکٹریاسمین راشدنے یہ ڈیڈلائن آج محکمہ پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کئیرمیں اعلی سطحی اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے دی۔اس موقع پر سیکرٹری صحت کیپٹن(ر)محمد عثمان یونس،سپیشل سیکرٹری ثاقب منان،ایڈیشنل سیکرٹری ٹیکنیکل ڈاکٹرعاصم الطاف،ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ سروسز ڈاکٹرہارون جہانگیر،پروفیسرجاویدچوہدری،پراجیکٹ ڈائریکٹر پنجاب ہیپاٹائٹس کنٹرول پروگرام ڈاکٹرخالد محمود،پراجیکٹ ڈائریکٹرپنجاب ٹی بی کنٹرول پروگرام  اکٹرسعیداختر،ڈاکٹربشیر،ڈاکٹرذوالفقار،ڈاکٹرنعیم،ڈائریکٹرپالیسی اینڈ سٹریٹیجک پلاننگ شگفتہ زریں،ڈاکٹرفیصل ودیگرافسران نے شرکت کی۔

صوبائی وزیر صحت ڈاکٹریاسمین راشدنے اجلاس کے دوران پنجاب میں امیونائزیشن کی کوریج کومزیدبہتر،انسدادپولیومہم،نئی بھرتی اور وبائی بیماریوں کے تدارک کیلئے اٹھائے گئے اقدامات کاجائزہ لیا۔سیکرٹری صحت کیپٹن(ر)محمد عثمان یونس نے صوبائی وزیر صحت کو مختلف اقدامات کی تفصیلات پیش کیں۔ صوبائی وزیر صحت ڈاکٹریاسمین راشد نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 1700نئے ویکسینیٹرز کوبھرتی کردیاگیاہے۔ویکسینیٹرز2014کے بعدپہلی باربھرتی کئے گئے ہیں۔دسمبر2020کے آخرتک مزید1000ویکسینیٹرز کی بھرتی کا عمل مکمل کرلیاجائے گا۔ وزیر صحت نے کہاکہ پنجاب کی تاریخ میں پہلی باراتنی کثیرتعدادمیں ویکسینیٹرز بھرتی کئے گئے ہیں۔شہری علاقہ جات میں امیونائزیشن کی کمی کوپوراکرنے کیلئے گھرگھرکاسروے کیا جائے۔

انہوں نے کہا کہ حفاظتی ٹیکوں کیلئے والدین کے موبائل پر باقاعدہ پیغام جاناچاہئے۔لاہوراور ڈی جی خان میں 100فیصدامیونائزیشن کوریج کیلئے تازہ اعدادوشماراور جدیدٹیکنالوجی کا استعمال کیاجائے۔ای پی آئی پروگرام کو انسدادپولیو مہم کے مائیکروپلان میں منتقل کیاجائے۔ویکسینیٹرزکی50فیصدخالی اسامیوں پربھرتی کاعمل مکمل ہوچکا ہے۔ ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا کہ مدراینڈچائلڈ سنٹرز کومزید اپ گریڈ کیاجارہاہے۔پیداہونے والے ہربچے کی ویکسینیشن کو یقینی بنایاجائے۔سرکاری ہسپتالوں میں والدین کوبچوں کابرتھ سرٹیفیکیٹ حفاظتی ٹیکے لگوانے کے بعدجاری کیاجائے گا۔ای پی آئی پروگرامز کادائرہ کارکوتمام 9ریجنزتک پھیلاجائے گا۔ای پی آئی پروگرام کے ریجنل دفاترسی اوز ہیلتھ کے ساتھ مل کرفرائض سرانجام دیں گے۔وزیراعظم عمران خان اور وزیراعلی پنجاب سردارعثمان بزدارکے ویژن کے مطابق پنجاب میں ہرپیداہونے والے بچے کوبیماریوں سے محفوظ دیکھناچاہتے ہیں۔سیکرٹری صحت کیپٹن(ر)محمدعثمان یونس نے اس موقع پر اظہارخیال کرتے ہوئے کہا کہ انسدادپولیو مہم کے دوران ہدف کومکمل کرنے کی پوری کوشش کی جارہی ہے۔