ڈی پی او بھکر کیپٹن (ر) محمد علی ضیاءکی ہدایات پرپولیو کے حفاظتی قطرے پلانے والوں ٹیموں کی سیکورٹی کیلئے پلان تشکیل

وطن عزیزمیں پولیو کے مرض کے خاتمے کیلئے عالمی ادارہ صحت کے اشتراک سے پولیو مکاو ہم جاری ہے جس کے تحت پروگرام کے مطابق مختلف اضلاع میں بیک وقت محکمہ صحت کی ٹیمیں گھر گھر جاکر پولیو کے حفاظتی قطرے پلاتی ہیں

ڈی پی او بھکر کیپٹن (ر) محمد علی ضیاءکی ہدایات پرپولیو کے حفاظتی قطرے پلانے والوں ٹیموں کی سیکورٹی کیلئے پلان تشکیل

بھکر: ڈی پی او بھکر کیپٹن ( ر) محمد علی ضیاءکی ہدایات پرپولیو کے حفاظتی قطرے پلانے والوں ٹیموں کی سیکورٹی کیلئے پلان تشکیل۔فول پروف سیکیورٹی یقینی بنانے کیلئے جملہ ایس ڈی پی اوز اور ایس ایچ اوز ڈیوٹی کی خود نگرانی کریں گے۔  تفصیلات کے مطابق وطن عزیزمیں پولیو کے مرض کے خاتمے کیلئے عالمی ادارہ صحت کے اشتراک سے پولیو مکاو ہم جاری ہے جس کے تحت پروگرام کے مطابق مختلف اضلاع میں بیک وقت محکمہ صحت کی ٹیمیں گھر گھر جاکر پولیو کے حفاظتی قطرے پلاتی ہیں۔ چند شر پسند عناصر کے پراپیگنڈہ کی وجہ سے اس مہم کوناکام کرنے کی کوششیں جارہی ہیں جس کے نتیجے میں ٹیموں پر حملے کئے گئے اور لوگوں کو منع کیا جارہا ہے کہ وہ اپنے بچوں کو حفاظتی قطر ے نہ پلوائیں۔

جبکہ ارض پاک کے مثبت تشخص اور محفوظ ملک کے نظریے کو اقوام عالم میں ترویج دینے کیلئے پولیو سے پاک بنانا ناگزیر ہے۔ اس وجہ سے جب بھی محکمہ صحت کی جانب سے پولیو مہم شروع کی جاتی ہے تو پنجاب پولیس کے جوان و افسران اس مہم کی کامیابی اور عوام الناس کی صحت و سلامتی کیلئے اپنا بھر پور کردار ادا کرتے ہیں۔ باقی اضلاع کی طرح، ضلع بھکر میں بھی 15 اگست تا 18اگست پولیو مہم شروع ہو چکی ہے۔ جس کی سیکیورٹی یقینی بنانے کیلئے ڈی پی او بھکر نے جامع سیکیورٹی پلان مرتب کیے جانے کے احکامات جاری کیے ہیں۔ اس مقصد کیلئے 100 سے زائد پولیس افسران و اہلکاران کو مامور کیا جارہا ہے۔ جبکہ تمام ایس ڈی پی اوز اور ایس ایچ اوز کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ اپنے علاقے میں جاری مہم کی سیکیورٹی ڈیوٹی خود چیک کریں گے اور اس ضمن میں صورت حال سے ضلعی ہیڈ کوارٹرز کو باخبر رکھیں گے۔ 

اس موقع پر ڈی پی او بھکر نے مزید اظہار خیال کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھکر پولیس عوام الناس کی جان و مال کے تحفظ کیلئے پوری طرح کوشاں ہے۔ اگرچہ کچھ امور میں مزید بہتری کی گنجائش ہے تاہم ہر ممکن کوشش اور میسر وسائل کو بروئے کارلایا جارہا ہے تاکہ نظام کو بہتر بنا کر معاشرے کو جرائم سے پاک اور امن وامان کا گہوارہ بنا جاسکے۔