سرکاری ریسٹ ہاؤسز سیاحتی مقاصد کیلئے استعمال کرنے کا فیصلہ

محکمہ آبپاشی اور پنجاب ٹورازم ڈویلپمنٹ کارپوریشن کے درمیان اثاثوں کی منتقلی پر اتفاق اقدام کا مقصد سیاحوں کو بہتر ماحول کی فراہمی یقینی بنانا ہے، وزیر آبپاشی محسن لغاری، مشیر سیاحت آصف محمود

سرکاری ریسٹ ہاؤسز سیاحتی مقاصد کیلئے استعمال کرنے کا فیصلہ

لاہور :پنجاب کے سرکاری ریسٹ ہاؤسز سیاحتی مقاصد کیلئے استعمال کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ اس ضمن میں ابتدائی طور پر محکمہ آبپاشی اور پنجاب ٹورازم ڈویلپمنٹ کارپوریشن کے درمیان اثاثوں کی منتقلی پر اتفاق ہوا ہے۔ اس حوالے سے محکمہ اریگیشن کے آفس میں مفاہمتی یاداشت پر دستخط کئے گئے۔ تقریب میں وزیر آبپاشی پنجاب سردار محسن خان لغاری اور مشیر وزیراعلی برائے سیاحت آصف محمود نے بھی شرکت کی۔

ایم او یو پر ٹورازم ڈویلپمنٹ کارپوریشن پنجاب (ٹی ڈی سی پی) کی طرف سے جنرل مینجر آپریشنز عاصم رضا جبکہ اریگیشن ڈیپارٹمنٹ کی جانب سے چیف انجینئر شیخ معین نے دستخط کئے۔ اس موقع پر سیکرٹری اریگیشن سیف انجم، سیکرٹری ٹورازم احسان اللہ بھٹہ اور ایم ڈی ٹی ڈی سی پی تنویر جبار بھی موجود تھے۔ اس پلان کے تحت وزیراعلیٰ کی ہدایت پر سمال ڈیمز پر موجود اریگیشن ریسٹ ہاوسز کو عوام کیلئے کھولا جائے گا اور وہ ٹی ڈی سی پی کے توسط سے ریسٹ ہاؤسز کی بکنگ کرا سکیں گے۔

وزیر آبپاشی محسن لغاری نے ایم او یو پر اظہار مسرت ہوئے کہا کہ اس اقدام کا مقصد سیاحوں کو بہتر ماحول کی فراہمی یقینی بنانا ہے۔ سیاحت کا فروغ وزیراعظم عمران خان کا ویژن ہے جس پر وزیراعلی سردار عثمان بزدار عملدرآمد کرا رہے ہیں۔ سیاحت کے فروغ کیلئے محکمہ آبپاشی اور محکمہ سیاحت ملکر کام کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ سرکاری ریسٹ ہاؤسز محکمہ آبپاشی اور صوبے کے عوام کا قیمتی اثاثہ ہیں۔

وقت آگیا ہے کہ ان کا درست مصرف یقینی بنایا جائے۔ تقریب سے خطاب میں مشیر سیاحت آصف محمود نے کہا کہ ٹی ڈی سی پی محکمہ آبپاشی کے ریسٹ ہاؤسز کی بکنگ کرسکے گی۔ پنجاب میں سرکاری ریسٹ ہاوئسز کا بڑا نیٹ ورک موجود ہے۔ ماضی میں صرف سرکاری افسران یہ ریسٹ ہاؤس استعمال کرتے تھے۔ اکثر ریسٹ ہاؤسز زیادہ تر خالی رہتے ہیں۔ پنجاب حکومت نے تمام ریسٹ ہاؤسز کا بہتر استعمال کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ محکمہ اریگیشن اور محکمہ سیاحت میں ایم او یو اسی سلسلے کی کڑی ہے۔ ریسٹ ہاؤسز عوام کیلئے کھولا جانا خوش آئند ہے۔