ازبک عوام وزیر اعظم عمران خان کے دورے کو بڑی اہمیت دے رہے ہیں ، پاکستان کے سفیر سیدعلی حسن گیلانی کا وڈیو پیغام

ازبک عوام وزیر اعظم عمران خان کے دورے کو بڑی اہمیت دے رہے ہیں ، پاکستان کے سفیر سیدعلی حسن گیلانی کا وڈیو پیغام

تاشقند :ازبکستان میں پاکستان کے سفیر سیدعلی حسن گیلانی نے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان کا دورہ ازبکستان تزویراتی اہمیت کاحامل ہے، ازبکستان وسط ایشیا کی دوسری بڑی معیشت ہے، ازبکستان پاکستان کی بندرگاہوں کے ذریعے دنیا تک رسائی چاہتا ہے، خطے میں دونوں ممالک کا اہم کردار ہے، دورے کے دوران مختلف شعبوں میں معاہدوں اور مفاہمتوں کی یادداشتوں پر دستخط ہوں گے۔

وزیراعظم کے دورہ ازبکستان سے متعلق ایک ویڈیو پیغام میں انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان دو روزہ دورے پر تاشقند آ رہے ہیں۔ وہ ثمر قند اور بخارا بھی جائیں گے۔ یہ ایک انتہائی تزویراتی اہمیت کا حامل دورہ ہے اور دونوں ممالک کے تعلقات کو سٹریٹیجک سطح پر مضبوط بنایا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کی ازبکستان میں اہم ملاقات ہو گی جس میں سیاست ، ثقافت ، معیشت، دفاع، تعلیم اور دیگر شعبوں میں تعاون کے فروغ کے لئے تفصیلی بات چیت ہو گی۔ اس موقع پر مفاہمت کی یادداشتوں اور معاہدوں پر بھی دستخط ہوں گے اور ایک مشترکہ بیان اعلامیے پر بھی ستخط کئ جائیں گے جس میں دونوں ممالک کے مستقبل کے تعلقات کا احاطہ کیاجائے گا۔

انہوں نے کہاکہ پچھلے چند برسوں میں ازبکستان اور پاکستان کے تعلقات میں واضح اور مثبت تبدیلی آئی ہے۔ دونوں ملک ایک دوسرے کے بہت قریب آئے ہیں۔ ازبکستان پاکستان کی بندر گاہوں کے ذریعے دنیا تک رسائی چاہتاہے اور پاکستان ازبکستان کے ذریعے وسط ایشیا اور یورپ کے ممالک کو اپنی برآمدات کو بڑھانا چاہتاہے ۔

انہوں نے کہا کہ یہاں پہ کل دواہم ملاقاتیں ہوئیں جن میں ایک بین الاحکومتی کمیشن اور کاروباری شخصیات کی ملاقات ہے اس کے لئے 150 کاروباری شخصیات تاشقند پہنچی ہیں اور لاکھوں ڈالرز کے معاہدے ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ خطے میں پاکستان اور ازبکستان کااہم کردار ہے۔

خطے میں جو ماحول ہے اس پر بھی گفتگو ہو گی اور مستقبل کی حکمت عملی طے کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستا ن کے وسط ایشیا کے تمام ممالک کے ساتھ تعلقات مضبوط ہو رہے ہیں، بالخصو ص ازبکستان کو وسط ایشیا میں مرکزی حیثیت حاصل اور یہ وسط ایشیا کی دوسری بڑی معیشت ہے۔ تو اس وجہ سے پاکستان اور ازبکستان کے تعلقات ایک بڑی اہمیت کے حامل ہیں۔

پاکستان کے ازبکستان کے ساتھ تعلقات بڑھیں گے، ازبکستان کے اس طرح کے تعلقات صرف 6 ممالک کے ساتھ ہیں۔انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کی قیادت نے تعلقات کو مضبوط بنانے کے لئے بھرپور کوششیں کی ہیں اور پچھلے 7 ، 8 ماہ میں بڑی تبدیلی آئی ہے اور آنے والے دنوں میں ہمارے تعلقات بہتری کی طرف جائیں گے۔

انہوں نے کہاکہ وزیراعظم عمران خان کا بڑی شدت سے انتظار کیا جا رہا ہے اور ازبکستان میں وزیراعظم جہا ں بھی جائیں گے وہاں پاکستان کے جھنڈے لہرا رہے ہیں اور تمام اہم مقامات پر ایل ای ڈیز کے ذریعے پاکستان سے متعلق دستاویزی فلمیں چلائی جارہیں۔

انہوں نے کہا کہ ازبک عوام وزیر اعظم کے اس دورے کو بڑیہ اہمیت دے رہے ہیں اور یہاں پر وزیراعظم کاشاندار خیرمقدم کیاجائے گا۔اہمیت دے رہے اور ہمارے وزیر اعظم کو یہاں پر ویلکم کررہے ہیں.