محکمہ انسانی حقوق واقلیتی امور کےلئے 500ملین کا بجٹ مختص کیا گیا ہے : اعجاز عالم آگسٹین

موجودہ حالات میں صوبائی حکومت نے متوازن بجٹ پیش کیا ۔صوبائی وزیر انسانی حقوق غیر معمولی حالات میں ایک عوام دوست بجٹ پیش کرنا قابل تحسین اقدام ہے : صوبائی وزیر انسانی حقوق واقلیتی امور

محکمہ انسانی حقوق واقلیتی امور کےلئے 500ملین کا بجٹ مختص کیا گیا ہے : اعجاز عالم آگسٹین

لاہور : صوبائی وزیر انسانی حقوق واقلیتی امور اعجاز عالم آگسٹین نے صوبہ پنجاب کے مالی سال 2020-21کے بجٹ پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ دنیا بھر میں کورونا وائرس کی تباہ کاریوں کی وجہ سے بہت سے ممالک کی معیشت کو چیلنجز کا سامنا ہے جبکہ پاکستان میں بھی وفاقی اور صوبوں کی سطح پر کرنٹ بجٹ میں صحت بالخصوص کورونا سے نمٹنے کے لئے خصوصی فنڈز کا اجراءممکن بنایا جا رہا ہے تاہم ایسے حالات میں پنجاب میں ایک متوازن اور دوست بجٹ پیش کردیا گیا ہے جو کہ یقینی طور پر ایک اہم سنگ میل ثابت ہوگا ۔

انہوں نے کہاکہ اس بات میں کوئی شک نہیں کہ تحریک انصاف کے دور حکومت میں معیشت مستحکم ہوئی ہے اور عام آدمی کی زندگی میں بہتری کا باعث بنی ہے تاہم موجودہ حالات کے پیش نظر پنجاب حکومت کیجانب محکمہ انسانی حقوق واقلیتی امور میں بھی ماضی کے مقابلے میں 50فیصد کمی کے ساتھ 500ملین کا بجٹ مختص کیا گیا ہے ، جس میں جاری ترقیاتی اسکیموں ، مذہبی اقلیتوں آبادی پر مشتمل علاقوں کے لئے شہری سہولیات کی فراہمی ، مذہبی عبادتگاہوں کی تزئین و آرائش ، عبادتگاہوں کے ذریعے سیاحت کا فروغ، قبرستانوں کی بحالی، طلباو طالبات کے لئے تعلیمی وظائف کا اجرا،مذہبی تہواروں پر تمام ممکنہ سہولیات، عبادت گاہوں کی سلامتی اورکسی بھی قسم کے مذہبی امتیاز سے پاک ماحول کی فراہمی کے لئے تمام تر وسائل بروئے کار لائے جائیں گے۔

صوبائی وزیر کا کہنا ہے ہمارا یقین ہے کہ مذہبی اقلیتوں کو تحفظ دیئے بغیر کو ئی بھی ریاست حقیقی معنوں میں جدید اور مہذب ریاست نہیں کہلاسکتی تاہم تحریک انصاف کے دور حکومت میں مذہبی اقلیتوں کو وہ تمام تر حقوق فراہم کیئے جا رہے ہیں جو کہ آئین پاکستان کے حوالے سے تمام شہریوں کو حاصل ہیں۔