صوبائی وزیرمال ملک محمد انور خان کا صوبائی مالیاتی بجٹ برائے 2020-21سے متعلق اظہار خیال

وزیر اعظم عمران خان اوروزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار ملک کومعاشی بحران سے نکالنے کیلئے بھرپور اقدامات اٹھا رہے ہیں: صوبائی وزیر مال

صوبائی وزیرمال ملک محمد انور خان کا صوبائی مالیاتی بجٹ برائے 2020-21سے متعلق اظہار خیال

لاہور:وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارکی قیادت میں حکومت نے مشکل حالات میں ٹیکس فری اور عوام دوست بجٹ پیش کیا ہے۔متوازن بجٹ پیش کرنے پروزیراعلیٰ عثمان بزدار اوران کی معاشی ٹیم کو مبارکباد دیتا ہوں۔ یہ بات صوبائی وزیر مال ملک محمد انور خان نے صوبائی مالیاتی بجٹ برائے 2020-21سے متعلق اظہار خیال کرتے ہوئے کہی۔   ملک محمد انور خان نے کہا ہے کہ موجودہ مشکل معاشی حالات میں اس سے بہتربجٹ ممکن نا تھا۔وزیر اعظم عمران خان اوروزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار ملک کومعاشی بحران سے نکالنے کیلئے بھرپور اقدامات اٹھا رہے ہیں۔

انہوں نے کہا ہے کہ سرکاری زمینوں کی لیز، کرایہ داری، فروخت وغیرہ (Land Utilization Policy)کی مد میں بورڈ آف ریونیو کے محصولات میں 20 ارب روپے کی وصولی متوقع ہے۔ جبکہ آئندہ مالی سال میں سٹیمپ ڈیوٹی کی موجودہ شرح کو 5 فیصد سے کم کر کے 1 فیصد کرنے سے کنسٹرکشن انڈسٹری کو فروغ ملے گا۔ صوبائی وزیر مال نے کہا ہے کہ حکومت پنجاب نے لینڈ ریونیو اتھارٹی کے زیر اہتمام اراضی ریکارڈ سنٹر کے قیام کے لئے 46 کروڑ، 60 لاکھ روپے مختص کئے ہیں۔ اراضی سینٹر کے قیام سے سروس ڈیلیوری میں مزید بہتری اور سہولت پیدا ہو گی۔

انہوں نے کہا ہے کہ صوبائی بجٹ 2020-21میں سبسڈی کلچر کی حوصلہ شکنی کی گئی ہے۔ اسی طرح بجٹ میں کمزور طبقے کے تحفظ کے لئے موثر اقدامات تجویز کئے گئے ہیں جبکہ عام آدمی کو ریلیف دینے کیلئے جامع منصوبہ بندی تیار کی گئی ہے۔ صوبائی وزیر مال ملک محمد انور خان نے کہا ہے کہ مشکل ترین حالات میں بھی عوام کو ریلیف دینے والا بجٹ پیش کیا گیا۔ پاکستان تحریک انصاف کا ایجنڈا عوامی خدمت ہے۔انہوں نے مزید کہا ہے کہ تحریک انصاف کی حکومت معاشرے کے ہر طبقے کی زندگیوں میں آسانیاں پیدا کر رہی ہے، عوام کی خدمت کا مشن پورا کریں گے۔