پاکستان ریلوے کو بہتر بناکر اسے منافع بخش ادارہ بنانا چاہتے ہیں،، وفاقی وزیر ریلوے اعظم سواتی

پاکستان ریلوے کو بہتر بناکر اسے منافع بخش ادارہ بنانا چاہتے ہیں،، وفاقی وزیر ریلوے اعظم سواتی

اسلام آباد :وفاقی وزیر ریلوے اعظم سواتی نے کہا ہے کہ پاکستان ریلوے کو بہتر بنانا ہے اور اسے منافع بخش ادارہ بنانا چاہتے ہیں، ریلوے کو بہتر بنانے کی کوشش کررہے ہیں اور کرتے رہیں گے،ریلوے کے ہسپتالوں کو دیکھ کر افسوس ہوتا ہے، ہسپتالوں کو مزید بہتر اور اپ گریڈ کررہے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے اسلام آباد کے مقامی ہوٹل میں پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے تحت پاکستان ریلوے کے ہستپالوں کی توسیع ، بحالی اور اپ گریڈیشن کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ جب سے ریلوے کا وزیر بنا ہوں وزیراعظم عمرا ن خان کے دیئے ہوئے ٹاسک پر کام کرنے کی کوشش کررہا ہوں۔ انہو ں نے کہا کہ ریلوے کے ہسپتال دیکھ کر افسوس ہوتا تھا ، ا ب ریلوے کو منافع بخش ادار ہ بنانا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میں اور میری ٹیم نے پچھلے 8 ماہ سے ریلوے کی بہتری کے لئے بہت کام کیا ہے اور وہ وقت قریب ہے کہ اس ادارے کو مزید بہتر ادارہ بنائیں گے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ ریلوے ایک وقت میں سب سے بڑا منافع بخش ادارہ تھا لیکن آج ریلوے کی حالت ابتر ہے اور اسے مزید بہتر بنانے کے لئے کوشاں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اللہ کا شکر ہے کہ ہم ریلوے میں بہت کام کر رہے ہیں اور اسے درست سمت میں لے کر جا رہے ہیں۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے قومی صحت ڈاکٹر فیصل سلطان نے کہا کہ ریلوے جو کام کرنے جا رہی ہے اسے سمجھنے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے وفاقی وزیر ریلوے اور سیکرٹری ریلوے کو ریلوے ہسپتالوں کی بہتری پر خراج تحسین پیش کیا اور ان کی کاوشوں سے ریلوے میں مزید بہتری آئے گی اور پاکستان ریلوے اپنے کام پر فوکس کر رہی ہے ۔ جو ریلوے کا سنٹرل کام نہیں ہے وہ پراپر فریم ورک کے ادروں کو دینے کا فیصلہ اچھا ہے،اس سے ریو نیو بھی ملے گا اور ریلوے کے ملازمین کو پینل سروس جاری رہے گا ۔

انہوں نے کہا کہ سپتال نئے بنائے جائیں گے یا موجودہ اسپتال کو آپ گریڈ کر دیا جائے گا ۔ ہسپتال ٹیکنالوجی آرٹ ہومین اٹریکشن کا گڑھ ہوتا ہے ، ان کومپلس اداروں کو پالش کرنے کے لیے یہ طریقہ کار بہتر ہے ۔ ہیلتھ انشورنس سکیم کا اجراء ہو چکا ہے ۔ پنجاب، خیبرپختونخوا اور فیڈرل یونٹ اس میں شامل ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت جو ہسپتال رکھے جا رہے ہیں وہ بہتر سروسز دیں گے۔

ریلوے کا مقصد جو نظرآ رہا ہے اپنا خرچہ کم کرنا ہے ۔ وفاقی وزیر سواتی ریلوے ہسپتالوں کو معیاری ہسپتال بنانا چاہتے ہیں ،ان کے اسٹینڈرڈ پر بھی نظر رکھنا ضروری ہے ، پاکستان میڈیکل کمیشن کے ضوابط پر بھی عمل کریں ۔ انہوں نے کہا کہ ریلوے کے ہسپتالوں کی توسیع ، بحالی اور اپ گریڈیشن ایک دلیر اقدام ہے ۔

اس سے ہر ریلوے ملازمین فائدہ اٹھائیں گے تاہم ہمارا ہیلتھ انفراسٹرکچر بہتر ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخوا میں ہیلتھ انشورنس کا اجرا ہو چکا ہے ،پنجاب اور دوسروں صوبوں میں بھی ہیلتھ کارڈ دیئے جائیں گے