بولیویا کی گمشدہ بلی، جو اب ملک کا اہم مسئلہ بن چکی ہے

بولیویا کی گمشدہ بلی، جو اب ملک کا اہم مسئلہ بن چکی ہے

بولیویا: بولیویا کی حکومت نے ایک گمشدہ بلی کے لیے ہر ممکن کوشش کی ہے جو ملک میں نجی پرواز کے دوران غائب ہوگئی۔ اب اس کی تلاش میں پولیس، فائرفائٹر، عام افراد اور جانوروں سے دور سے رابطہ کرنے والے ماہرین (سائیکک) بھی شامل ہوچکے ہیں۔

ٹیٹو نامی بلّے مالکن اینڈریا آئٹور نے سوشل میڈیا پر اپنے پالتو جانور کی تصویراور تفصیلات پوسٹ کرکے عوام سے مدد کی درخواست کی ہے۔ ان کے مطابق وہ کسی بھی صورت اس کی تلاش سے دستبردار نہیں ہوں گی۔

ٹیٹو سفید اور سرمئی رنگ کا ایک نوجوان بلّا ہے جو اپنی مالکن کے بہت لاڈلا بھی تھا۔ اس کی گمشدگی کے بعد بولیویا کے ایک وزیر نے جانوروں سے رابطہ کرنے والے سائیکِک ماہر سے بھی رابطہ کیا ہے۔ دوسری جانب سراغرساں، پولیس اور دیگر افراد اس کی تلاش کررہے ہیں۔

اس کی وجہ یہ ہے کہ ادارے ٹیٹو کی تلاش میں اب تک ناکام رہے ہیں اور 8 دسمبر سے غائب بلّے کا اب تک کوئی نشان نہیں مل سکا ہے۔ خاتون کے مطابق وہ ٹیٹو کے ساتھ ہوائی جہاز سے تاریجا سے سانتا کروز جارہی تھیں۔ طیارہ اترنے کے بعد بلی اچانک غائب ہوگئی۔

سوشل میڈیا پر صارفین نے فضائی کمپنی بی او اے پر بھی تنقید کی ہے۔ اس کی مالکن نے کہا ہے کہ وہ ٹیٹو کی تلاش جاری رکھیں گی اور کبھی بھی اس سے دستبردار نہ ہوں گی۔