اندرون ملک فضائی آپریشن کی بحالی

ایئرپورٹ اسٹاف اور مسافر پارکنگ ایریاز سے آگے نہیں جاسکیں گے۔  ایئرپورٹ منیجر سماجی فاصلوں پر عمل درآمد یقینی بنائیں گے، روانگی سے قبل طیارے میں اسپرے کے بعد سول ایوی ایشن سے سرٹیفکیٹ لینا لازمی ہوگا

اندرون ملک فضائی آپریشن کی بحالی

اندرون ملک فضائی آپریشن کی بحالی کے لیے سول ایوی ایشن اتھارٹی نے ایڈوائزری جاری کردی۔ اندرون ملک پروازوں پر ہر قسم کا پروٹوکول ختم کر دیا گیا۔ سول ایوی ایشن اتھارٹی ( سی اے اے) کے اعلامیہ کے مطابق پی آئی اے اور نجی ایئرلائنز 16 مئی کو اندرون ملک آپریشن شروع کررہی ہیں، ایئرپورٹ اسٹاف اور مسافر پارکنگ ایریاز سے آگے نہیں جاسکیں گے۔  ایئرپورٹ منیجر سماجی فاصلوں پر عمل درآمد یقینی بنائیں گے، روانگی سے قبل طیارے میں اسپرے کے بعد سول ایوی ایشن سے سرٹیفکیٹ لینا لازمی ہوگا۔

 سی اے اے نے مزید کہا کہ پانچ مخصوص ایئرپورٹس پر اندرون ملک روانگی، آمد پر ڈس انفیکشن اسپرےکریں گے۔ اندرون ملک پروازوں پر ہر قسم کا پروٹوکول ختم کر دیا گیا۔ کریو کے لیے حفاظتی لباس، این 95 ماسک اور سرجیکل گلوز کا استعمال لازمی قرار دیدیا گیا ہے۔  سول ایوی ایشن اتھارٹی نے کہا کہ اندرون ملک مسافروں کو ہیلتھ ڈکلیریشن فارم بورڈنگ سے قبل مکمل کرنا ہو گا۔ اسٹیشن منیجر مسافروں کی مکمل فہرست پرواز کی روانگی سے قبل محکمہ صحت کے فوکل پرسن کو دےگا۔ 

مسافروں اور فضائی عملے کو تھرمل اسکینر سے گزارا جائیگا، ٹمپریچر ظاہر ہونے پر آف لوڈ کردیا جائیگا۔ طیارےمیں سیٹوں کی آخری لائن میڈیکل ایمرجنسی کے لیے خالی رکھی جائے گی۔  سول ایوی ایشن اتھارٹی حکام کے مطابق مسافروں کو سرجیکل ماسک ایئرلائنز کی جانب سے دیئے جائیں گے۔ دوران پرواز مسافروں کو اپنی سیٹ تبدیل کرنے کی اجازت نہیں ہو گی۔ مسافروں کو ہر 30 منٹ بعد سینیٹائزر فراہم کیا جائے گا۔ دوران پرواز کھانا فراہم نہیں کیا جائیگا، ضرورت پر صرف پانی کی بوتل دی جائیگی۔