پنجاب پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ بورڈ اور پنک ربن فاؤنڈیشن کے باہمی اشتراک و تعاون سے چھاتی کے کینسر سے متعلق آگاہی سیمینار کا اہتمام

تقریب میں چھاتی کے کینسر کے خلاف شعور بیدار کرنے اور پی اینڈ ڈی کی خواتین عملہ کو اس سے بچاؤ سے متعلق آگاہی پر خصوصی زور دیا گیا

 پنجاب پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ بورڈ اور پنک ربن فاؤنڈیشن کے باہمی اشتراک و تعاون سے چھاتی کے کینسر سے متعلق آگاہی سیمینار کا اہتمام

لاہور: پنجاب پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ بورڈ اور پنک ربن فاؤنڈیشن کے باہمی اشتراک و تعاون سے چھاتی کے کینسر سے متعلق آگاہی سیمینار کا اہتمام پی اینڈ ڈی کمپلیکس میں کیا گیا۔ تقریب میں چھاتی کے کینسر کے خلاف شعور بیدار کرنے اور پی اینڈ ڈی کی خواتین عملہ کو اس سے بچاؤ سے متعلق آگاہی پر خصوصی زور دیا گیا۔ تقریب کی صدارت سیکرٹری پی اینڈ ڈی بورڈ عمران سکندر بلوچ نے کی جبکہ ممبر ہیلتھ نیوٹریشن اینڈ پاپولیشن ڈاکٹر سہیل ثقلین سمیت ایڈیشنل سیکرٹری پی اینڈ ڈی نبیلہ عرفان، ڈین آئی پی ایچ ڈاکٹر زرفشاں طاہر، ڈاکٹر روبینہ سہیل، پنک ربن فاؤنڈیشن کی سینئر نمائندہ سونیا قیصر، تمام اہم اسٹیک ہولڈرز اور پی اینڈ ڈی کی لیڈی سٹاف نے بھرپور شرکت کی۔

ڈین آئی پی ایچ ڈاکٹر زرفشاں طاہر اور ڈاکٹر روبینہ سہیل نے چھاتی کے کینسر کے بارے میں صحت عامہ کے تناظر، اسکریننگ کے کلینکل تناظر اور اس بیماری کی بروقت تشخیص پر تفصیلی بریفنگ دی۔ پروفیسر روبینہ نے پی اینڈ ڈی کی لیڈی سٹاف ممبران کو نہ صرف معمول کے طبی امور پر مشاورت دی بلکہ اپنی لیڈی ڈاکٹروں کو بھی سٹاف کی صحت سے متعلق معاونت کی ہدایت کی۔ پنک ربن تنظیم کی نمائندہ سونیا قیصر نے خواتین کو خود سے اس بیماری کے بارے میں جانچنے اور روک تھام کے طریقہ کار پر عمل کرنے کے بارے میں تفصیلی آگاہی دی۔

اس موقع پر اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سیکرٹری پی اینڈ ڈی بورڈ عمران سکندر بلوچ نے کہا کہ حکومت پنجاب نے ہمیشہ صحت کے شعبے کو ترجیح دی ہے اور صوبہ بھر میں صحت سے متعلق آگاہی سیشن تشکیل دئیے ہیں۔ ان کامزید کہنا تھا کہ چھاتی کا کینسر دنیا بھر کی خواتین میں سب سے عام کینسر ہے۔ ایک سروے کے مطابق ایشیاء میں چھاتی کے کینسر کے بڑھتے ہوئے واقعات میں پاکستان بھی شامل ہے اور ایک اندازے کے مطابق ہر 10 خواتین میں سے ایک اس بیماری کا شکار ہوتی ہے۔ سیکرٹری پی اینڈ ڈی بورڈ نے بھی صحت کی دیکھ بھال میں بہتری کی طرف اقدامات کرنے کے عزم کا اظہار کیا۔ سیمینار کے اختتام پر پی اینڈ ڈی کی جانب سے مہمانوں کو سونئیر اور شرکا میں یادگاری سند بھی تقسیم کی گئیں۔