صوبائی وزیر آبپاشی سردار محسن خان لغاری کی محکمہ کی دو سالہ کار کردگی کے حوالے سے سے ایوان وزیر اعلی میں پریس کانفرنس

ملک کی معاشی ترقی کے لیے آبپاشی کا نظام ریڈھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے……ہمارا نظام آبپاشی دنیا کے لیے مشغل راہ ہوا کرتا تھا۔محکمہ آبپاشی میں اصلاحات کا آغاز کردیا گیاہے…… وسیع مدتی منصوبوں پر کام ہماری اولین ترجیح ہے: صوبائی وزیر آبپاشی

صوبائی وزیر آبپاشی سردار محسن خان لغاری کی محکمہ کی دو سالہ کار کردگی کے حوالے سے سے ایوان وزیر اعلی میں پریس کانفرنس

لاہور: صوبائی وزیر آبپاشی محمدمحسن خان لغاری نے اپنے محکمہ کی دو سالہ کارکردگی کے حوالے سے آج ایوان وزیراعلی میں اہم پریس کانفرنس کی - صوبائی وزیر آبپاشی سردار محسن خان لغاری  نے بتایا کہ ملک کی معاشی ترقی کے لیے آبپاشی کا نظام ریڈھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے ہمارا نظام آبپاشی دنیا کے لئے مشعل راہ ہواکرتا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ محکمہ آبپاشی میں اصلاحات کا آغاز کردیا گیا ہے، وسیع مدتی منصوبوں پر کام ہماری اولین ترجیح ہے۔ صوبائی وزیر کا کہنا تھا اسلام بیراج کی بحالی پر کام جاری ہے اور آبیانہ کے حصول کے لئے ای آبیانہ سسٹم کا آغاز ہوچکا ہے جس کے تحت کمپیوٹرائزڈ سسٹم کے ذریعے آبیانہ کی وصولی کی جائے گی اور آبیانہ سے حاصل شدہ رقم پرانی نہروں کی بہتری کے لئے خرچ ہوگی اور اس سے محکمہ کی سالانہ آمدن میں دو ارب روپے کا اضافہ ہوگا- صوبائی وزیر نے مزید کہا کہ ہیومن ریسورس مینجمنٹ سسٹم کا قیام عمل میں لایا جاچکا ہے تاکہ افرادی قوت کے بہتر استعمال کو یقینی بنایا جاسکے، اس سسٹم کے ذریعے ملازمین اور افسران کی تعیناتی بارے معلومات کا حصول بھی ممکن ہوگا- اس سسٹم کے ذریعے تجربہ کار ٹیم کا قیام عمل میں لانا آسان ہوگا-

صوبائی وزیر محسن لغاری نے کہا کہ ایک نئے سسٹم ای ٹینڈرنگ کا بھی آغاز کردیا گیا ہے جس کے ذریعے اب محکمہ ہذا کی ٹینڈرنگ کمپیوٹرائزڈ سسٹم کے تحت ہوگی تاکہ افسران اور ٹھیکیدار کے درمیان رابطہ کو ختم کیا جاسکے- یہ سسٹم کرپشن کے خاتمے میں مدد گار ثابت ہوگا- صوبائی وزیر نے کہا کہ انجینئرز کی کیرئیر پلاننگ کے حوالے سے اقدامات اٹھائے گئے ہیں تاکہ انجینئرز کے لئے بہتر ٹریننگ کا حصول ممکن ہو- اس کے علاوہ محکمہ سے افسران کی تعیناتی اور ٹرانسفر کے حوالے سے سفارش کلچر کا بھی خاتمہ کردیا گیا ہے- انہوں نے کہا کہ ہمارے گزشتہ سال اقدامات کی وجہ سے پانی کی فراہمی میں 55فیصد بہتری آئی ہے، ٹیل کے کسان کو پانی کی فراہمی ہماری اولین ترجیح ہے -

دس دس سال سے خشک ٹیل پر اب پانی کی فراہمی کو ممکن بنایا گیا ہے- وزارت آبپاشی کے منصوبوں کے بارے میں صوبائی وزیر کا کہنا تھا کہ تریموں اور پنجند بیراج کی توسیع کا عمل شروع ہوچکا ہے جس پر 16800 ملین روپے لاگت آئے گی- جلالپور کینال پر کام کا آغاز ہوچکا ہے جس سے پنڈدادنخان اور خوشاب کا ایک لاکھ60ہزار ا یکڑ رقبہ سیراب ہوگا- گریٹرتھل کینال فیز ٹو کی توسیع کا کام جاری ہے جس سے دو لاکھ 93ہزار ایکڑ رقبہ سیراب ہوگا-دادھوچہ ڈیم کی تعمیر سے راولپنڈی اور اسلام آبادکے شہریوں کو صاف پانی کا حصول ممکن ہوگا- صوبائی وزیر   سردار محسن خان لغاری نے بتایا کہ راجن پور اور ڈیرہ غازی خان کے پہاڑی نالوں کے پانی کو  ذخیرہ کرنے کا منصوبہ بھی ہماری ترجیحات میں شامل ہے جبکہ پوٹھوا ریجن میں چھوٹے ڈیموں کی تعمیر کے عمل کو یقینی بنایا جائے گا۔

صوبائی وزیر کا کہنا تھا تھا کہ پنجند بیراج،ڈی جی خان کینال اور اپر جہلم کینال کی توسیع اور بحالی کا کام بھی جاری ہے۔انہوں نے  بتایا کہ پانی چوروں کے خلاف سخت اقدامات اٹھائے جارہے ہیں - پچھلے سال 6500ایف آئی آرکا اندراج ہوا اور 2900پانی چور پکڑے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ جب تک آبادی کو کنٹرول نہیں کریں گے آگے پانی کی فی کس شرح کم ہوتی چلی جائے گی۔ صوبائی وزیر نے نے بتایا کہ فلڈ سیزن سے پہلے تمام حفاظتی اقدامات اٹھا لئے گئے تھے جس سے سیلاب کے نقصانات میں واضع کمی نظر آئی-