سموگ کی شدت میں کمی کے باوجود فضائی آلودگی پر کنٹرول کی سرگرمیاں جاری

سموگ کی شدت میں کمی کے باوجود فضائی آلودگی پر کنٹرول کی سرگرمیاں جاری

لاہور:- سموگ کی شدت میں کمی کے باوجود فضائی آلودگی پر کنٹرول کی سرگرمیاں جاری رکھی گئی ہیں۔پنجاب ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی تمام سرگرمیوں کی روزانہ کی بنیاد پر مانیٹرنگ اور رپورٹنگ کو یقینی بنا رہی ہے۔ ائیر کوالٹی انڈکس کے مطابق صوبے بھر میں سموگ کی صورتحال اطمینان بخش ہے۔

ان خیالات کا اظہار ڈائریکٹر جنرل پنجاب ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی راجہ خرم شہزاد نے آج سموگ کنٹرول کاروائیوں پر بریفنگ کے دوران کیا۔ ڈی جی پی ڈی ایم اے نے مزید بتایا کہ پچھلے چند دنوں سے حد نظر میں محسوس کی جانے والی کمی دھند کی وجہ سے محسوس کی جا رہی ہے۔پچھلے 24گھنٹے میں فضائی آلودگی کا سبب بننے والے عناصر کی حوصلہ شکنی کے لیے  8لاکھ،99ہزار 700روپے کے جرمانے کیے گئے ہیں۔20اکتوبر سے اب تک  جرمانوں کی  مجموعی مالیت6 کڑوڑ 21لاکھ29 ہزار 500 تک پہنچ چکی ہے۔13ہزار 135گاڑیاں بند کی جا چکی ہیں۔2ہزار 850صنعتی یونٹس اور 1ہزار 844بھٹے سیل ہو چکے ہیں۔ 2ہزار 386بھٹے زگ زیگ ٹیکنالوجی پر منتقل کروائے جا چکے ہیں جبکہ 685بھٹوں کی جدید ٹیکنالوجی پر منتقلی کا عمل جاری ہے۔سموگ پر کنٹرول کی کاروائیوں کے ساتھ احساس کفالت پروگرام کے تحت وظائف کی تقسیم کا عمل بھی جاری ہے۔اتھارٹی پروگرام کے تحت اب تک 12لاکھ 32ہزار402افراد میں 14ارب،95کڑوڑ، 51لاکھ 12ہزار 750روپے کے وظائف تقسیم کر چکی ہے۔ پنجاب بھر میں 77فیصد مستحقین احساس کفالت سے استفادہ کر چکے ہیں۔