کامیاب جوان پروگرام کے ذریعہ معاونت حاصل کرنے والے کراچی کے نوجوان آصف علی نے پاکستان میں بچوں کیلئے پہلا انٹرپرینورشپ سکول کھول لیا، عثمان ڈارکی منفرد آئیڈیا پرآصف علی کو مبارکباد

کامیاب جوان پروگرام کے ذریعہ معاونت حاصل کرنے والے کراچی کے نوجوان آصف علی نے پاکستان میں بچوں کیلئے پہلا انٹرپرینورشپ سکول کھول لیا، عثمان ڈارکی منفرد آئیڈیا پرآصف علی کو مبارکباد

اسلام آباد :وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے امورنوجوانان عثمان ڈارنے کامیاب جوان پروگرام کے زریعہ معاونت حاصل کرنے والے کراچی کے نوجوان آصف علی کو بچوں کیلئے پہلا انٹرپرینورشپ سکول کھولنے پرمبارکباد دیتے ہوئے کہاہے کہ دنیا بھر میں ایسے آئیڈیاز کی ہی قیمت ہوتی ہے۔ تفصیلات کے مطابق کامیاب جوان پروگرام نوجوانوں کے ساتھ ساتھ بچوں کا مستقبل بھی سنوارنے لگا، اس سلسلہ میں کراچی کے نوجوان آصف علی نے ننھے بچوں کو کامیاب بنانے کی منفرد کاوش کرتے ہوئے کامیاب جوان پروگرام کے ذریعے بچوں کیلئے پہلا انٹرپینورشپ سکول کھول لیا، اس طرز کے سکول کو کھولنے کی سوچ کو کامیاب بنانے میں حکومت کی جانب سے بھی بھرپور مدد فراہم کی گئی اوراس منفرد بزنس آئیڈیا کیلئے فوری رقم فراہم کر دی گئی۔

آصف علی نے بتایا کہ آج سے پہلے بچوں کو انٹرپینورشپ کی تعلیم دینے کا رجحان نہیں تھا،سکول میں بچوں کو آغاز میں ہی ملازمت لینے والی نہیں دینے والی تربیت فراہم کر رہے ہیں،سکول میں روایتی تعلیم کے ساتھ انٹرپینورشپ کی بنیادی معلومات فراہم کی جارہی ہے ۔ آصف علی علی نے بتایا کہ یہ سوچ ملک کے مستقبل کیلئے ہے تاہم اس پرعملدرآمد کیلئے ان کے پاس رقم نہیں تھی۔ آصف علی نے بتایا کہ کامیاب جوان پروگرام کے ذریعے انہیں ماہ میں میں 1 کروڑ روپے کی رقم مل گئی، اوران کا مشن ہے کہ آئندہ 20 سال میں پاکستان کو ’’جاب کریئٹرز‘‘ مارکیٹ بنائیں۔

وزیراعظم کے عماون خصوصی برائے امورنوجوانان اورکامیاب جوان پروگرام کے سربراہ عثمان ڈارنے منفرد تصورپر آصف علی کو مبارکباد دیتے ہوئے کہاہے کہ انہیںآصف علی کے زبردست بزنس آئیڈیا نے متاثر کیا ہے، دنیا بھر میں ایسے آئیڈیاز کی ہی قیمت ہے۔عثمان ڈار نے کہاکہ خوشی ہے کہ نوجوانوں کے ساتھ ساتھ بچوں کا مستقبل سنوارنے کا موقع بھی ملاہے۔انہوں نے کہاکہ پاکستان میںانٹرپینور شپ کی سوچ کو عام کرنا ہوگا، بچوں کو آغاز میں ہی اس کی تربیت کی فراہمی شاندار قدم ہے۔انہوں نے کہاکہ وہ اپنے بچوں کو بھی ایسی ہی تعلیم و تربیت دینے کے خواہشمند ہیں