سمندرپارپاکستانیزان دبئی سوشل گروپ کا دبئی میں کرکٹ ہنگامہ سیزن ٹوکا شاندارانعقاد

سمندرپارپاکستانیزان دبئی سوشل گروپ کا دبئی میں کرکٹ ہنگامہ سیزن ٹوکا شاندارانعقاد
سمندرپارپاکستانیزان دبئی سوشل گروپ کا دبئی میں کرکٹ ہنگامہ سیزن ٹوکا شاندارانعقاد
سمندرپارپاکستانیزان دبئی سوشل گروپ کا دبئی میں کرکٹ ہنگامہ سیزن ٹوکا شاندارانعقاد
سمندرپارپاکستانیزان دبئی سوشل گروپ کا دبئی میں کرکٹ ہنگامہ سیزن ٹوکا شاندارانعقاد
سمندرپارپاکستانیزان دبئی سوشل گروپ کا دبئی میں کرکٹ ہنگامہ سیزن ٹوکا شاندارانعقاد
سمندرپارپاکستانیزان دبئی سوشل گروپ کا دبئی میں کرکٹ ہنگامہ سیزن ٹوکا شاندارانعقاد
سمندرپارپاکستانیزان دبئی سوشل گروپ کا دبئی میں کرکٹ ہنگامہ سیزن ٹوکا شاندارانعقاد
سمندرپارپاکستانیزان دبئی سوشل گروپ کا دبئی میں کرکٹ ہنگامہ سیزن ٹوکا شاندارانعقاد
سمندرپارپاکستانیزان دبئی سوشل گروپ کا دبئی میں کرکٹ ہنگامہ سیزن ٹوکا شاندارانعقاد
سمندرپارپاکستانیزان دبئی سوشل گروپ کا دبئی میں کرکٹ ہنگامہ سیزن ٹوکا شاندارانعقاد
سمندرپارپاکستانیزان دبئی سوشل گروپ کا دبئی میں کرکٹ ہنگامہ سیزن ٹوکا شاندارانعقاد
سمندرپارپاکستانیزان دبئی سوشل گروپ کا دبئی میں کرکٹ ہنگامہ سیزن ٹوکا شاندارانعقاد
سمندرپارپاکستانیزان دبئی سوشل گروپ کا دبئی میں کرکٹ ہنگامہ سیزن ٹوکا شاندارانعقاد
سمندرپارپاکستانیزان دبئی سوشل گروپ کا دبئی میں کرکٹ ہنگامہ سیزن ٹوکا شاندارانعقاد
سمندرپارپاکستانیزان دبئی سوشل گروپ کا دبئی میں کرکٹ ہنگامہ سیزن ٹوکا شاندارانعقاد
سمندرپارپاکستانیزان دبئی سوشل گروپ کا دبئی میں کرکٹ ہنگامہ سیزن ٹوکا شاندارانعقاد
سمندرپارپاکستانیزان دبئی سوشل گروپ کا دبئی میں کرکٹ ہنگامہ سیزن ٹوکا شاندارانعقاد
سمندرپارپاکستانیزان دبئی سوشل گروپ کا دبئی میں کرکٹ ہنگامہ سیزن ٹوکا شاندارانعقاد
1
1
1
1
1
1
1
1
1
1
1
1
1
1
1
1
1
1

گزشتہ روزسمندرپارپاکستانیوں پرمشتمل ایک مشہورسوشل گروپ پاکستانیزان دبئی کی طرف سے متحدہ عرب امارات کی سات ریاستوں میں سے چوبیس مختلف کرکٹ ٹیموں نے اپنی بھرپور کارکردگی سے کرکٹ ہنگامہ سیزن ٹو کو کامیابی سے ہمکنار کیا۔

کرکٹ ہنگامہ سیزن ٹو اپنے پہلے سیزن کی طرح شاندار کامیابی حاصل کی جس میں یو اے ای کی ساتوں ریاستوں سے کرکٹ کے سینکڑوں شائقین نے شرکت کرکے کرکٹ کے ایونٹ کو میلے میں تبدیل کردیا۔ سب شائقین نے سیزن ٹو کی انتظامیہ کی طرف سے بہترین انتظام اور منصوبہ بندی کو بخوبی سراہا۔ ایونٹ کے مہمان خصوصی قونصل جنرل آف پاکستان دبئی گیان چند نے خصوصی شرکت کی اور ان کا کہنا تھا کہ ایونٹ انتظامیہ کا کویڈ کے اس دور میں اتنا کامیاب ٹورنامنٹ کروانا قابل تحسین عمل ہے اس سے معاشرے میں کھیلوں کوفروغ حاصل ہوتا ہے۔ مزید ان کا کہنا تھا کہ پاکستانی قوںصل خانہ مستقبل قریب میں اس طرح کے صحت افزا کھیلوں و تقریبات کے انعقاد میں مکمل معاونت کرے گا۔ علاوہ ازیں مہمان اعزاز گلف نیوز کے چیف ایڈیٹر اشفاق احمد کا کہنا تھا کہ پاکستانیز ان دبئی گروپ سوشل میڈیا کا مثبت کردار اجاگر کرکے معاشرے کو کھیلوں کی طرف راغب کررہے ہیں میں ان کی کاوشوں کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔ ایونٹ کا فائنل ٹاکرا خضرالیون اور میجشن الیون کے درمیان ہوا جس میں پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے خضرالیون نے چار وکٹوں کے نقصان پر پانچ اوورز میں ستر اسکور کا ٹارگٹ دیا جس کو میجشن الیون نے تین وکٹوں کے نقصان پر صرف ساٹھ اسکورز پر بازی ہار گئی۔ فاتح ٹیم کو مہمان خصوصی نے ٹورنامنٹ انتظامیہ کی طرف سے ٹرافی کیساتھ سات ہزار درہم کیش انعام دیا۔ خضر الیون کے کپتان شہریار کا کہنا تھا کہ پی آئی ڈی کی طرف سے کرکٹ ٹورنامنٹ ہمارے لیے ایک نعمت سے کم نہیں اور میں تمام کھلاڑیوں کا شکرگزار ہوں جنہوں نے سخت محنت کرکے آج فتح سے ہمکنار کروایا۔ رنراپ ٹیم میجشن الیون کو ٹورنامنٹ انتظامیہ کی طرف سے رنراپ ٹرافی کیساتھ دوہزار پانچ سو کیش انعام دیا گیا۔ ٹورنامنٹ کے بہترین بلے باز شہاب خان اور بہترین بالر بادشاہ خان کو شیلڈ دی گئی اور انتظامیہ کی کرکٹ ٹیم پی آئی ڈی الیون نے اس ٹورنامنٹ کی تیسری پوزیشن حاصل کی۔ پی آی ڈی ایک فیملی گروپ کی شکل میں کام کرتا ہے اور اس ٹورنامنٹ میں پہلی بارایک خاتون ردا ارسلان نے اپنی ٹیم ابراہیم الیون متعارف کراوی جو اس بات کا ثبوت ہے کہ خواتین ہر شوبہ میں مردوں کے شانہ بشانہ کام کر سکتی ہیں۔ردا ارسلان ( اونر ابراہیم الیون)کا کہنا تھا پی آی ڈی ایک فیملی گروپ ہے جہاں مردوں کے ساتھ ساتھ خواتین بھی ہر شعبہ میں حصہ لے سکتی ہیں۔ 

اس ایونٹ کوچارچاند لگانے میں جن سپانسرز نے بنیادی کردار ادا کیا جن میں ٹائیٹل سپانسر قریشی فوڈز جبکہ ایسوسی ایٹ سپانسرز میں ابیویا ملک و پرائم ہسپتال کے علاوہ جنرل سپانسرز میں سہیل اشرف ٹریولز، پنڈی بوائزریسٹورنٹ، اے آر سپورٹس، سیالکوٹ سپورٹس، الوان سلک اینڈ پرنٹ شامل تھے۔

نظامت کے فرائض فہد شاہد اور فہد اسد نے بخوبی نبھائے جبکہ ایونٹ اور پی آی ڈی انتظامیہ میں شیخ عمرفاروق،عثمان لاہوری، مزمل شیخ، عمرفاروق میجشن، راحیل لودھی اور ناصر بنگش ، زہیب نبیل ،نصر زمان، سیدعادل،انعم،رامش، سمیراراھیل،ولید، دانش اسد، نعمان،حمزہ شامل تھے۔ 

ٹورنامنٹ کی چوبیس ٹیموں میں خضر الیون، میجشن الیون، پی آئی ڈی الیون، ایم ڈبلیو آئی، البصیرہ ٹائیگرز، دین پورسی سی، عزیز سی سی، سمارٹ چینج رائل الیون، ابراہیم الیون، سلطان سی سی، لندن سٹار، دبئی سٹرائیکرز، حمدان الیون، فرینڈز الیون، طلحہ وارئیرز، فلائی ہاکس، ایف ایم ٹی کے، آر یو ایس شاہین، رمادہ سی سی، کونکوڈ ٹائیگرز، مظہر سی سی، کونکورڈ کوروڈکس گروپ، سٹار آف پی آئی ڈی اور خضرحیات ریڈ رائیڈر شامل ہیں۔